10 برس تک اپنی بیوی کے ہاتھوں جنسی تشدد کا نشانہ بننے والے مرد کی دردناک کہانی

10 برس تک اپنی بیوی کے ہاتھوں جنسی تشدد کا نشانہ بننے والے مرد کی دردناک کہانی
10 برس تک اپنی بیوی کے ہاتھوں جنسی تشدد کا نشانہ بننے والے مرد کی دردناک کہانی

  

کیف(مانیٹرنگ ڈیسک) خواتین پر گھریلو تشدد کی کہانیاں تو آئے روز سننے کو ملتی ہیں لیکن مردوں پر گھریلو تشدد کی بات کم ہی کی جاتی ہے۔ اب بی بی سی پر یوکرین کے ایک شخص نے اپنی بیوی کے ہاتھوں 10سال تک جنسی تشدد کا نشانہ بننے کی دردناک کہانی دنیا کو سنا دی ہے۔ اس آدمی نے اپنی شناخت ظاہر نہ کرتے ہوئے بتایا کہ ”ہم دونوں کی عمر اس وقت 22سال تھی جب ہم پہلی بار ملے۔ میں اس سے بہت محبت کرتا تھا چنانچہ اس کے لیے میں نے فیملی، گھر بار سب کچھ چھوڑ دیا لیکن بعد میں مجھے پتا چلا کہ وہ اس قابل نہ تھی۔ وہ ہر وقت جنسیت کا تقاضا کرتی رہتی۔ میں دن بھر کا تھکا ہارا گھر آتا تو وہ آتے ہی ازدواجی تعلق قائم کرنے کو کہتی۔ میرا انکار بھی کسی کام نہ آتا اور وہ میرے ساتھ زبردستی کرڈالتی۔“

اس شخص نے بتایا کہ ”اس کی یہ حرکت میرے لیے انتہائی تکلیف دہ ہوتی تھی۔ میں کبھی انتہائی بیمار ہوتا، اس حالت میں بھی وہ میرے ساتھ جنسی تعلق قائم کرتی۔ اسے میری صحت کی بھی کوئی فکر نہ ہوتی تھی۔ 10سال تک میں اس کا یہ سلوک برداشت کرتا رہا اور بالآخر ہم فیملی تھراپسٹ کو ملے۔ وہاں میں پہلی بار پھٹ پڑا اور بیوی کے سامنے اس کی حرکتوں کا پول کھول دیا۔ وہ شدید غصے میں آ گئی اور چیختے ہوئے کہنے لگی کہ میں جھوٹ بول رہا ہوں۔ اس نے دھمکی دی کہ وہ مجھ سے طلاق لے لے گی، حالانکہ میں جانتا تھا کہ وہ کبھی طلاق نہیں لے گی۔ اس نے محض دھمکی دی تھی لیکن میں اسے طلاق دینے پر رضامند ہو گیا اور یوں جنسی استحصال کے اس طویل جبر کا خاتمہ ہوا۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -