اداکار احمد علی بٹ نے ”پب جی“ پر پابندی سے متعلق ہائیکورٹ کے ریمارکس کو احمقانہ قرار دیدیا، کیا کچھ کہا؟

اداکار احمد علی بٹ نے ”پب جی“ پر پابندی سے متعلق ہائیکورٹ کے ریمارکس کو ...
اداکار احمد علی بٹ نے ”پب جی“ پر پابندی سے متعلق ہائیکورٹ کے ریمارکس کو احمقانہ قرار دیدیا، کیا کچھ کہا؟

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان فلم و ٹی وی انڈسٹری کے معروف اداکار احمد علی بٹ نے ویڈیو گیم ”پب جی“ پر پابندئی لگنے سے متعلق لاہور ہائیکورٹ کے ریمارکس کو احمقانہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عدالت غم و غصے میں ایسے فیصلے دے رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام پر احمد علی بٹ نے ایک سٹوری شیئر کی جس میں لاہور ہائیکورٹ کے فیصلے کو بیوقوفانہ کہہ دیا۔انہوں نے لکھا کہ فیصلے سے ایسا لگتا ہے کہ لاہور ہائیکورٹ 12 سالہ بچے سے گیم میں شکست کھا چکی ہے اور غم و غصے میں ایسے فیصلے دے رہی ہے۔

واضح رہے کہ لاہور ہائی کورٹ میں شہری فیضان مقصود کی جانب سے ویڈیو گیم پب جی پر پابندی کی درخواست دائر کی گئی تھی۔ شہری فیضان مقصود کی جانب سے دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ پب جی بچوں اور نوجوان نسل کی شخصیت پر منفی اثر ڈال رہی ہے اور اس کی وجہ سے بچوں میں قوت فیصلہ کی کمی اور شدت پسندی بڑھ رہی ہے۔

درخواست میں استدعا کی گئی تھی کہ گیم کو پلے سٹور سے ہٹایا جائے جس پر لاہور ہائیکورٹ نے دلائل سننے کے بعد پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) کو چھ ہفتے میں فیصلہ کرنے کا حکم دیتے ہوئے درخواست نمٹا دی ہے۔

مزید :

تفریح -