ریکارڈٹیکس کولیکشن‘ثابت ہوگیاکاروباری برادری ٹیکس دیناچاہتی ہے:اسدمشہدی

ریکارڈٹیکس کولیکشن‘ثابت ہوگیاکاروباری برادری ٹیکس دیناچاہتی ہے:اسدمشہدی

راولپنڈی( کامرس ڈیسک)راولپنڈی کی کاروباری برادری سے ایک ارب روپے ریکارڈ ٹیکس جمع ہونے پر ڈائریکٹر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن راولپنڈی جام سراج احمد نے صدر راولپنڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری سید اسد مشہدی کی قیادت میں تاجر تنظیموں کے رہنماﺅں کو ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن آفس راولپنڈی میں مدعو کیا اور ٹیکس کلیکشن میں بھر پور تعاون کرنے پر تعریفی اسناد پیش کیں اور بھر پور پذیرائی کی ، اس موقع پر سینئر نائب صدر میاں ہمایوں پرویز ،نائب صدر صبور ملک،اراکین مجلس عاملہ ، تاجررہنماءشیخ صدیق، چوہدری اقبال، شرجیل میر طاہر تاج بھٹی، فیاض قریشی ، ہارون شاہ ،شیخ محمد سلیم،قادر میرحاجی ارشد،شیخ خالد، یاسر مغل اورچوہدری امتیازبھی موجو دتھے ۔جام سراج نے کہا کہ راولپنڈی کی کاروباری برادری نے صوبہ بھر میں ٹیکس ادائیگی میں سر فہرست رہی ، ادارہ ٹیکس گزاروں کی حوصلہ افزائی اور اعتمادبڑھانا چاہتا ہے تا کہ نئی روایات کا آغاز کیا جا سکے جہاں ٹیکس گزاروں اور حکومت کے مابین مکمل ہم آہنگی ہو جس کے مثبت ثمرات ملک کی مجموعی معاشی صورت حال پررونما ہونگے، ڈائریکٹر ایکسائز کے دروازے کاروباری برادری کے لئے کھلے ہیں ،تمام مسائل کو مل کر اور ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا ،کاروباری برادری کے بھر پور اعتماد اور صوبہ بھر میں ریکارڈ ساز کارکردگی نے ادارے کا مان بڑھایا ہے جس کے لئے تمام کاروباری برادری کے مشکور ہیں ۔ڈائریکٹر ایکسائز نے کہا کہ پراپرٹی ٹیکس جمع کرانے کی آخری تاریخ 28نومبر ہے ، بزنس کمیونٹی سے گزارش ہے کہ اس سے قبل اپنے واجبات ادا کر یں ۔

بصورت دیگر چارجز کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے اور چارجز کو ختم کرانا راولپنڈی ڈائریکٹوریٹ کے اختیارات سے باہر ہے، تاہم نوٹسسز کے مسائل کو مل بیٹھ کر حل کر لیں گے ،انہوں نے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ راولپنڈی چیمبر اور تمام ایسوسی ایشنز ماضی کی طرح مل کر ٹیکس کلیکشن میں اپنا کردار ادا کریں ،انہوں نے تمام مسائل کو مل بیٹھ کر حل کرنے کی اہمیت پر زور دیا اور اپنے بھر پور تعاون کا یقین دلایا ۔صدر راولپنڈی چیمبر سید اسد مشہدی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ راولپنڈی کی کاروباری برادری نے ریکارڈ ٹیکس دیا ہے تو حکومت اس ٹیکس کو راولپنڈی کی ترقی پر صرف کرے ،ثابت ہو گیا کاروباری برادری ٹیکس دینا چاہتی ہے اور کبھی ٹیکس سے بیزاری کا اظہار نہیں کیا لیکن اوور ٹیکسیشن نہیں ہونا چاہیئے ،آنے والے دنوں میں ٹیکس کلیکش بڑھے گی اور حکومت کو مزید ریونیو حاصل ہو گا ، حکومت کاروباری برادری کو اعتماد میں لے کر پالیسیا ں ترتیب دے توحکومت کو مزید فائدہ ہو گا ،انہوں نے ڈائریکٹر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اگر ایسی روایات حکومت کے ہر ٹیکس کلیکشن محکمہ میں شروع ہو جائیں تو مسائل ہی ختم ہو جائیں ، اسد مشہدی نے ڈائریکٹر ایکسائز کو اپنے ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا ۔

مزید : کامرس