سپین: بھارتی کاروباری مراکز پر چھاپے، 78گرفتار،28رہا

سپین: بھارتی کاروباری مراکز پر چھاپے، 78گرفتار،28رہا

 بارسلونا(آن لائن)اسپین کے اینٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ نے نیشنل پولیس اورمحکمہ ٹیکس کے ساتھ مشترکہ آپریشن میں بھارتی کاروباری مراکزسے78 افراد کو گرفتار کر لیا جبکہ 28کو پوچھ گچھ کے بعد رہا کر دیاگیا۔ تفصیلات کے مطابق یہ گرفتاریاں اسپین کے مختلف شہروں میڈریڈ،کاتالونیا، ایکسترامادورا، ویلینسیا ، اندالوسیا اور گران کناریا میں کی گئیں۔ گرفتار شدگان پر مصنوعات کی خریدو فروخت میں ٹیکس ڈیپارٹمنٹ کے ساتھ فراڈ کا الزام ہے۔ آپریشن کے دوران 150 بھارتی کاروباری مراکز پر چھاپے مارے گئے۔ پولیس کے مطابق گرفتار ہونے والے ہندوستانی باشندوں کے خلاف شک کی بنیا د پر2012 میں تحقیقات کا آغاز کیا گیا تھا۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں کا کہنا ہے کہ یہ گروہ انفرادی اور کاروباری کمپنیوں کی صورت میں کپڑے کی مصنوعات، آرائش کی اشیا، کمپیوٹر اور فوٹو گرافی سے متعلقہ سامان چین اور یورپ کے دوسرے ممالک سے درآمد کرتا تھا ،درآمد کے وقت ٹیکس بچانے کے لئے سامان کی قیمت بہت کم ظاہر کی جاتی تھی اور سامان کو بیچتے وقت اس کی فروخت کا ٹیکس ادا نہیں کیا جاتا تھا اس کے علاوہ گروہ پر کالا دھن سفید کرنے اور بڑے پیمانے پرٹیکس کی خرد برد کا الزام لگایا ہے۔ گروہ کے ارکان کا منشیات کے دھندے میں ملوث ہونے کا ثبوت بھی پولیس کے ہاتھ لگا ہے۔ ملزمان پر انٹی کرپشن ڈیپارٹمنٹ نے منظم جرائم پیشہ گروہ قائم کرنے، کالا دھن سفید کرنے، ٹیکس ڈیپارٹمنٹ سے فراڈ ، سرکاری کاغذات میں ہیر اپھیر ی ،منی لانڈرنگ ، اسمگلنگ اورعوامی صحت کو نقصان پہنچانے کے الزامات عائد کیے گئے ہیں گروہ کا ہیڈ آفس اسپین کے دارلحکومت میڈریڈ کے صنعتی علاقہ’’ کوبو کائی خا‘‘ میں تھاجہاں بڑے گوداموں میں یہ کاروبار کیا جا رہا تھا۔ میڈریڈ کی میونسپل کمیٹی ’’ فنیلابرادا ‘‘کی عدالت نے مشکوک کاروباری مراکز پر چھاپے مارنے اور کئی بینک اکاؤنٹس کو منجمد کرنے کے احکامات جاری کیے تھے۔اس گرینڈ آپریشن میں اٹلی، پرتگال اور اسپین کی پولیس نے مشترکہ طور پر حصہ لیا۔

مزید : عالمی منظر