لاہور ایئرپورٹ پر کارکنوں نے طاہر القادری کاپرتپاک استقبال کیا

لاہور ایئرپورٹ پر کارکنوں نے طاہر القادری کاپرتپاک استقبال کیا

لاہور(سٹاف رپورٹر)پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری وقت مقررہ پر لاہور ایئرپورٹ پہنچے جہاں پاکستان عوامی تحریک کے کارکنوں کی بڑی تعداد نے ان کا پرتپاک استقبال کیا، ایئرپورٹ سے داتا دربار تک تمام راستے پر پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں، عزیز بھٹی ٹاﺅن تنظیم کی طرف سے ان کا مغلپورہ پہنچنے فقید المثال استقبال کیا گیا، خواتین کارکنان کی ایک بڑی تعداد صبح 5 بجے ہی ایئرپورٹ پہنچ گئی تھی، راستے میں کارکنان انقلاب زندہ باد ، ویلکم ویلکم طاہر القادری اور گو نواز گو کے نعرے لگاتے رہے،قافلے کے ہمراہ خوبصورت سفید گھوڑے بھی رقص کرتے رہے جو عوام اور شرکائے ریلی کی توجہ کا خاص مرکز رہے،ائیرپورٹ سے روانگی کے بعد ڈاکٹر طاہرالقادری کے قافلے کی گاڑی کی ٹکر سے کارکن معمولی زخمی ہوگیا جس پر ڈاکٹر طاہرالقادری گاڑی سے خود اتر ے اور کارکن کو پانی پلایا اسے پیار دیا، تمام راستہ خیرمقدمی بینرز اور پارٹی پرچموں سے سجایا گیا تھا،ڈاکٹر طاہر القادری کا قافلہ 7:30 بجے ایئرپورٹ سے روانہ ہوا اور تقریبا5 گھنٹے کے بعد داتا دربار پہنچا، کارکنان لاﺅڈ سپیکر پر خطاب بھی کرتے رہے اور کہتے رہے کہ تبدیلی اور انقلاب پاکستان کامقدر ہے اسے اب کوئی نہیں روک سکتا، جگہ جگہ ڈاکٹر طاہر القادری ہاتھ ہلا کر کارکنان کے نعروں کا جواب دیتے رہے 24 گھنٹے مسلسل سفر کے باوجود ڈاکٹر طاہر القادریہ ہشاش بشاش تھے ، قافلے کی سکیورٹی کیلئے پاکستان عوامی تحریک کے کارکنان نے زنجیر بنارکھی تھی اور وہ ڈاکٹر طاہر القادری کے ہمراہ چلنے والی گاڑیوں کی حفاظت کرتے رہے ،جبکہ اس مو قع پر پولیس کی بھاری نفری بھی اس قافلے کی حفاظت پر مامور رہی،ڈاکٹر طاہر القادری نے ایئرپورٹ پہنچنے پر کارکنان کو ہدایات دی تھیں کہ پرامن رہا جائے اور راستے میں کسی قسم کی کوئی رکاوٹ کھڑی کی جائے اور نہ ہی ٹریفک کے بہاﺅ میں کوئی خلل ڈالا جائے، ایئرپورٹ پہنچنے پر پاکستان عوامی تحریک کے مرکزی صدر رحیق احمد عباسی ، مرکزی سیکرٹری جنرل خرم نواز گنڈا پور، راجہ زاہد، افضل گجر، ساجد بھٹی ، جواد حامد ،قاضی فیض السلام، میڈیا ایڈوائزر محمدنوراللہ، سیکرٹری اطلاعات پنجاب مشتاق احمد سمیت درجنوں سینئر عہدیداروں نے ان کا ایئرپورٹ پر استقبال کیا،یورپ سے پاکستان عوامی تحریک کا ایک 35 رکنی وفد ڈاکٹر طاہر القادری کے ہمراہ لندن پہنچا۔

پرتپاک استقبال

مزید : صفحہ آخر