وہ لباس جس نے عرب دنیامیں تہلکہ مچادیا

وہ لباس جس نے عرب دنیامیں تہلکہ مچادیا
وہ لباس جس نے عرب دنیامیں تہلکہ مچادیا

  

بیروت(مانیٹرنگ ڈیسک) لبنان کی ایک پاپ سٹار ہیفا وہبی کے لباس نے عرب ممالک کے سوشل میڈیا میں بحث چھیڑ دی ہے اور مصر، اردن، سعودی عرب سمیت کئی ممالک کی خواتین نے ہیفا وہبی کے لباس پر تنقید کی ہے جبکہ مصری ٹی وی چینل نے ناظرین سے معافی مانگ لی ہے ۔

دبئی میں پاکستانی کی سرعام بوس وکنار کی کوشش ناکام، قانون حرکت میں

ہیفا وہبی نے گذشتہ ہفتے عرب سٹار اکیڈمی میوزک شو میں اپنے فن کا مظاہرہ کیا تھاجسے عرب ممالک میں نشرکیاگیااوراِس دوران گلوکارہ نے عریاں لباس زیب تن کررکھاتھا جبکہ پہلے بھی وہ اپنے لباس کی وجہ سے تنازعات میں رہی ہیں۔ہیفا وہبی کے اس شو کو بیس لاکھ سے زیادہ افراد نے آن لائن بھی دیکھا۔

لنبانی گلوکارہ کے اس شو کی ویڈیو پر کیے جانے والے تبصروں نے عرب ممالک میں خواتین کے لباس کے حوالے سے نئی بحث شروع ہو گئی ہے جن میں کئی عرب خواتین نے اس ویڈیو کو شرمناک قرار دیا ہے۔

بدصورت مردوں کے خواتین کے ساتھ جنسی تعلقات سے متعلق دلچسپ تحقیق

لبنان میں منی سکرٹ اور بکنی پہننا انہونی بات نہیں ہے لیکن سعودی عرب کی خواتین خود کو سر سے پاو¿ں تک کر ڈھانپ کر رکھتی ہیں۔ہیفا وہبی نے ٹویٹ کی کہ وہ یہ جان کر حیران ہیں کہ سٹیج پر ان کا لباس کیسا نظر آ رہا تھا؟ فورم کی روشنی کو اس کے لئے ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان کا لباس اتنا عریاں نہیں تھا۔

ہیفاوہبی کے حق میں لکھتے ہوئے لبنان کی بلاگر دانا خیر اللہ کہتی ہیں کہ لوگوں نے اس پر تنازع کیا کیونکہ عرب ثقافت میں کشمکش چل رہی ہے، لوگوں کو لگتا ہے کہ اگر عورتیں ایسی کپڑے پہنے گی تو اس سے ثقافت کی غلط نمائندگی ہوگی لیکن مجھے یہ فرق زیادہ لگتا ہے کیونکہ کلبوں میں عرب لڑکیاں اس سے بھی زیادہ عریاں کپڑے پہنتی ہیں لیکن ان پر کوئی غور نہیں کرتا کیونکہ وہاں کیمرے نہیں ہوتے۔

شوہر کے خیالوں کی ملکہ کو بیوی کی دھمکیاں

اس شو کو نشر کرنے والے مصر کے چینل سی بی سی نے اپنی نشریات پر ناظرین سے معافی مانگ لی ہے۔

مزید : تفریح