امریکہ کا 50لاکھ غیر قانونی تارکین وطن کیلئے حوصلہ افزاءاقدام

امریکہ کا 50لاکھ غیر قانونی تارکین وطن کیلئے حوصلہ افزاءاقدام
امریکہ کا 50لاکھ غیر قانونی تارکین وطن کیلئے حوصلہ افزاءاقدام

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی صدرباراک اوباما نے اپنے خصوصی اختیارات استعمال کرتے ہوئے امیگریشن اصلاحات کا ایگزیکٹو آرڈر جاری کرنے کا اعلان کردیا جس کے باعث امریکہ میں غیر قانونی طور پر مقیم قریباً 50 لاکھ افراد ملک بدری سے بچ سکتے ہیں۔

9/11حملوں میں سعودی شہزادے کا کردار، امریکی جیل میں قید مجرم نے سنسنی خیز دعویٰ کردیا

قوم سے خطاب میں اوباما کاکہناتھاکہ محنت کش تارکینِ وطن کو ایک موقع دینے کی ضرورت ہے، امریکہ ہمیشہ سے تارکینِ وطن کی سرزمین رہا ہے اور وہ چھپے رہنے کا عمل ترک کر کے سامنے آئیں اور قانون سے اپنا درست تعلق استوار کریں۔اپنے خطاب میں امریکی صدر نے قوم کو یقین دلایا کہ وہ عام معافی کا اعلان نہیں کر رہے۔ یادرہے کہ اس وقت امریکہ میں ایک کروڑ دس لاکھ کے قریب غیر قانونی تارکینِ وطن مقیم ہیں۔

بھارتی حکومت عرب دنیا میں مقیم شہریوں کی تنخواہیں بڑھوانے کے لیے سرگرم،پاکستانیوں کوبھی فائدے کا امکان

ادھر حزبِ مخالف کی جماعت ری پبلکن پارٹی نے کہا ہے کہ کانگریس سے منظوری لیے بغیر یہ اقدام صدر کی جانب سے اختیارات سے تجاوز کے مترادف ہے اور اس سے حکومت اور حزبِ اختلاف کے تعلقات پر منفی اثر پڑے گا۔

سعودی عرب میں شاہ عبداللہ کی جان نشینی پر سوالات اُٹھنے لگے

صدر اوباما کی اصلاحات کے نتیجے میں جن افراد کو فائدہ پہنچے گا ان میں سے بیشتر وہ والدین ہیں جن کی اولاد امریکی شہری ہے یا پھر پانچ برس سے قانونی طور پر امریکہ میں مقیم ہے۔ان افراد کو امریکہ میں رہنے کے لیے نہ صرف ٹیکس دینا ہوں گے بلکہ یہ بھی ثابت کرنا ہوگا کہ وہ ماضی میں کسی مجرمانہ سرگرمی میں ملوث نہیں رہے۔

مزید : بین الاقوامی