تاج پورہ اور غازی آباد میں بجلی کی بوسیدہ لٹکتی تاروں سے حادثہ کا خدشہ

تاج پورہ اور غازی آباد میں بجلی کی بوسیدہ لٹکتی تاروں سے حادثہ کا خدشہ

  



 لاہور( لیاقت کھرل) تاج پورہ اور غازی آباد کے علاقہ میں بجلی کی بوسیدہ لٹکتی تاریں اور بے ہنگم انداز میں لگائے گئے کھمبے کسی وقت بھی بڑے حادثے کا سبب بن سکتے ہیں اور کئی انسانی ضائع ہونے کا اندیشہ اور موجب بن سکتے ہیں۔ شہریوں کی روز بروز شکایتوں اور بار بار یقین دہانیوں کے باوجود لیسکو حکام کے کان پر جوں تک نہیں رینگتی ہے۔ شہریوں نے اس مجرمانہ غفلت اور لاپرواہی پر سخت تشویش کا اظہار کیا اور ان میں غم و غصہ کا پایا جاتا ہے۔ سروئے میں شہریوں نے لیسکو چیف سے مداخلت کی اپیل کر دی ہے۔ وائس چیئرمین چودھری ارشد محمود نے بتایا کہ غازی آباد گلی نمبر14 میں مائی چراغ بی بی مسجد کے قریب بجلی کا پول گھر کے دروازے کے بالکل ساتھ لگا ہوا ہے اور اس کے اوپر سے گزرنے والی تاریں کئی سال سے پرانی اور بوسیدہ ہونے پر ننگی اور لٹک رہی ہیں، جس کے باعث آئے روز اردگرد گھروں میں کرنٹ آ جاتا ہے۔ اس بارے ایکسیئن کینٹ کو متعدد بار درخواستیں دے چکے ہیں، شہریوں محمد صدیق، محمد اسلم اور حاجی محمد شفیع اور قاری گلزار احمد سمیت اسد نواز نے بتایا کہ بجلی کی لٹکتی ہوئی تاریں علاقہ میں جانی خوف کی علامت بن چکی ہیں۔ گلی نمبر14 ، گلی نمبر14اے اور محلہ ریاض پورہ کی گلی نمبر1 اورمحلہ ریاض پورہ غازی آباد گلی نمبر2 میں بجلی کی بوسیدہ تاریں سروں پر لٹک رہی ہیں۔ ان تاروں اور بے ہنگم نصب کھمبوں سے آئے روز کرنٹ آ جاتا ہے اور بالخصوص بارشوں کے موسم میں بجلی کے کھمبوں کے قریب سے گزرنا جان کو خطرے میں ڈالنا ہے۔ اس موقع پر شہزاد احمد، نواز احمد، عمر حیات اور دیگر نے بتایا کہ بے ہنگم کھمبے اور بجلی کی لٹکتی بوسیدہ اور ننگی تاریں سروں پر سرعام لٹک رہی ہیں۔ اس بارے متعدد بار لیسکو حکام کو شکایات کر چکے ہیں لیکن ہر بار کوئی نہ کوئی تسلی یا یقین دہانی دے کر ٹال دیا جاتا ہے۔ اس موقع پر شہریوں کاکہنا تھا کہ لیسکو چیف ذاتی مداخلت کر کے شہریوں کو اس اذیت اور پریشانی سے نکالیں وگرنہ بجلی کے بل نہیں دیں گے اور لیسکو حکام کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1