بونیر ،گرلز ہائی سکولوں کے مابین نعت خوانی اور حسن قرات کے مقابلے

بونیر ،گرلز ہائی سکولوں کے مابین نعت خوانی اور حسن قرات کے مقابلے

  



بونیر ۔)ڈسٹرکٹ رپورٹر(گو رنمنٹ گرلز ہائی سکولوں کے بچیوں کے درمیان نعت شریف اور قرات کے درمیان مقابلے ۔بارہ گھنٹے گزر نے کے باوجود طالبات کے ساتھ ائے ہوئے والدین پریشانی کے شکار ،طوطالئی ،گوکند ،سلازئی اور دیگر علاقوں سے ائے ہوئے والدین نے رات کے اندھیرے میں ہزاروں روپیہ خرچ کرکے ٹیکسی کے ذریعے اپنے گھروں کو روانہ ہوگئے جبکہ ٹیکسی کی استطاعت نہ رکھنے والے والدین نے عزیز وہ اقارب کے ہمراہ رات گزاری ،محکمہ تعلیم بونیر کے اعلی حکام اور صوبائی وزیر تعلیم فوری طور پر نوٹس لے۔تفصیلات کے مطابق سرکاری سکول کے بچیوں کے درمیان نعت شریف اور قرات کے درمیان مقابلے جیکا ماڈل سکول ڈگر میں منعقد ہوئے ،انتظامیہ کی جانب سے مقابلے دیر سے شروع ہوئے اور رات گئے تک جاری رہے ،بچیوں کے ساتھ ائے ہوئے والدین نے مقامی میڈٰیا کو بتایا کہ ہم دور دراز علاقوں طوطالئی ،چنگلئی ،گوکند اور علاقہ سلازئی سے صبح سے ائے ہوئے ہے ۔ابھی تک مقابلے جاری ہے ،اپنے گھروں کو واپس جانے کے لئے ٹیکسی کا کرایہ دو ہزار روپے سے کم نہیں ہے ،انہوں نے کہا کہ بہتر یہ تھا کہ یہ مقابلے ہر حلقہ میں منعقد کرائے جاتے تو ہمیں مشکلات سے دوچار نہ ہونا پڑتا ،انہوں نے کہا کہ محکمہ تعلیم بونیر کے اعلی حکام اور صوبائی حکومت اور وزیر تعلیم اس کا نوٹس لے اور ائندہ کے لئے والدین کو اس طرح کے امتھان میں نہ ڈالے ،بعض والدین نے شکایت کی کہ ٹیکسی کے رقم ہمارے پاس نہیں ہے ہم مجبورا اپنے عزیز وہ اقارب کے ہاں رات گزاریں گے اور صبح اپنے گھروں کو روانہ ہوں گے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر