ٹرمپ نے مسلمانوں کے خدشات دور کرنے کیلئے مشاورتی تنظیم بنانے کا فیصلہ کر لیا

ٹرمپ نے مسلمانوں کے خدشات دور کرنے کیلئے مشاورتی تنظیم بنانے کا فیصلہ کر لیا
ٹرمپ نے مسلمانوں کے خدشات دور کرنے کیلئے مشاورتی تنظیم بنانے کا فیصلہ کر لیا

  


نیو یارک (مانیٹرنگ ڈیسک ) نومنتخب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مسلمانوں کی مشاورتی تنظیم بنانے کا فیصلہ کیا ہے ۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق بظاہر مسلمانوں سے نفرت کرنے والے ڈونلڈ ٹرمپ نے سرکردہ مسلمان رہنماﺅں پر مشتمل ایک مشاورتی تنظیم بنانے کا فیصلہ کیا ہے جوامریکی حکومت کیساتھ ملکر کام کریگی تاہم اس ضمن میں مسلمانوں کے خدشات دور کئے جائیں گے۔

یہ ملک گیر تنظیم امریکا میں رہنے والے40لاکھ سے زائد مسلمانوں سے رابطے کریگی ، اس سلسلے میں ساجد تارڑ کو ٹاسک دیا گیا ہے جو امریکا کی مختلف ریاستوں میں رہنے والے سرکردہ مسلمانوں سے رابطے کر رہے ہیں اور انہیں اعتاد میں لے رہے ہیں ۔

وائٹ ہاو¿س میں حکومت ری پبلکن کی ہو یا ڈیموکریٹس کی، امریکہ میں رہنے والے مسلمانوں کو نظراندازکرنا مشکل ہے۔ امریکہ کے نئے صدر کی طرف سے مسلمانوں کو اعتماد میں لینے اور مشاورتی عمل میں شریک کرنے سے جہاں امریکہ کی سلامتی یقینی ہوگی، وہیں مسلمانوں میں پائے جانے والے خدشات بھی دور ہوں گے اور وہ پہلے سے زیادہ بہتر طریقے سے اپنے ملک کی خدمت کرسکیں گے۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں