منی لانڈرنگ، ترک صدر کے بیٹے کے خلاف اٹلی میں تحقیقات شروع

منی لانڈرنگ، ترک صدر کے بیٹے کے خلاف اٹلی میں تحقیقات شروع
منی لانڈرنگ، ترک صدر کے بیٹے کے خلاف اٹلی میں تحقیقات شروع

  



انقرہ (آن لائن) ترکی کے صدر رجب طیب اردگان کے بیٹے بلال اردگان کیخلاف منی لانڈرنگ میں ملوث ہونے کے الزام میں اٹلی میں تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔ 2013ءمیں منظر عام پر آنیوالے اس کرپشن سکینڈل نے ترکی کی سیاسی اسٹیبلشمنٹ کو ہلا کر رکھ دیا تھا۔

ڈونلڈ ٹرمپ کی اہلیہ میلانیہ اور بیٹے بیرن وائٹ ہاﺅس سے باہر رہیں گے

برطانوی اخبار انڈیپنڈنٹ کے مطابق شمالی اٹلی کے شہر بولوگنا کے پبلک پراسیکیوٹر نے گزشتہ ستمبر بڑی مقدار میں پیسوں کو ری سائیکل کرنے کیلئے اٹلی لانے پر ترک صدر کے بیٹے 35سالہ بلال اردگان کے خلاف باضابطہ طور پر کارروائی شروع کر دی۔ بلال اردگان پر یہ الزام ترک حکومت کے ایک اہم مخالف ترکی کے تاجر مرات حکان اذان نے لگایا تھا جن کے بھائی سم اذان نے ترکی یوتھ پارٹی کی بنیاد رکھی تھی۔ اٹلی کے سرکاری وکیل اس بات کی تحقیقات کررہے ہیں کہ اس رقم کا تعلق ترکی میں بدعنوانی کے اس بڑے سکینڈل سے ہوسکتا ہے جس میں ترکی کی حکمران جماعت جسٹس اینڈ ڈیویلپمنٹ پارٹی ملوث ہے ۔ بلال اردگان نے کہا ہے کہ وہ پی ایچ ڈی کی تعلیم مکمل کرنے کیلئے بیوی بچوں کے ساتھ ترکی کے شہر بولوگنا میں ہیں۔

مزید : بین الاقوامی