انسانی حقوق کی بہتر ی کوفروغ دینے کی پالیسی جاری رکھیں گے ، پاکستان

انسانی حقوق کی بہتر ی کوفروغ دینے کی پالیسی جاری رکھیں گے ، پاکستان

جنیوا (آن لائن) پاکستان نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے ورکنگ گروپ کو آگاہ کیا ہے وہ مضبوط جمہوریت، آزاد عدلیہ، آزاد میڈیا اور فعال سول سوسائٹی کے ساتھ شہریوں کے انسانی حقوق کو بہتر بنانے اور اسے فروغ دینے کی پالیسی جاری رکھے گا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق پاکستان نے جنیوا میں حال ہی میں ورکنگ گروپ کے ایک اجلاس میں اپنی پیش کردہ رپورٹ میں انسانی حقوق اور بنیادی آزادیوں کو فروغ دینے اور تحفظ کے حصول میں دہشت گردی، وسائل کی رکاوٹوں، صلاحیت کی تعمیر، بیداری میں اضافے کے مثر نفاذ کے لیے چیلنجز کا سامنا کرنا پڑتا ہے جبکہ قوانین، پالیسیوں اور ماحولیاتی تبدیلی کی وجہ سے خطرناک گروپوں اور قدرتی آفتوں کی حفاظت، خطرناک گروپوں سے تحفظ اور موسمیاتی تبدیلی کے باعث قدرتی آفات جیسے چیلیجز کا سامنا کررہا ہے۔پاکستانی وفد کی سربراہی وزیر خارجہ خواجہ آصف نے کی، جس میں سینیٹر عائشہ رضا فاروق، بیرسٹر ظفر اللہ خان، وزیر اعظم کے خصوصی معاون برائے قانون اور دیگر حکام نے بھی شامل تھے۔پاکستان نے بتایا کہ وزارت انسانی حقوق نے وفاقی اور صوبائی سطح پر مشاورت کے عمل کو پورا کرنے کے بعد انسانی حقوق کے فروغ اور تحفظ کے لیے قومی پالیسی فریم ورک کا مسودہ تیار کیا ہے، یہ مسودہ وفاقی کابینہ سے منظوری سے پہلے مشاورت کے لیے تمام وزرا کو تقسیم کیا گیا اور ساتھ ہی انسانی حقوق پر صوبائی حکمت عملی بنانے کا عمل صوبائی حکومتوں کے تعاون سے جاری ہے۔رپورٹ کا کہنا ہے کہ حالیہ برسوں کے درمیان ہونے والی پیش رفت کے ساتھ ساتھ چیلنچز پر قابو پانے کے لیے پاکستان کو پالیسی اور قانونی اصلاحات کے حوالے سے جرات مندانہ اقدامات اٹھانا ہوں گے۔رپورٹ کے مطابق وزارت انسانی حقوق کی جانب سے قومی پالیسی کے مسودہ میں لڑکیوں اور خواتین پر تشدد کو ختم کرنے کے لیے بھی پالیسی بنائی گئی ہے، جس میں صنفی مساوات پر مبنی تشدد کی روک تھام، جواب، تحفظ اور بحالی کے طریقہ کار کا تعین کیا گیا ہے۔

انسانی حقوق

مزید : صفحہ آخر