تحفظ ختن نبوت ؐ کیلئے جماعت اہلسنت کی گھنٹہ گھر سے کچہری تک لبیک یارسول اللہ ریلی

تحفظ ختن نبوت ؐ کیلئے جماعت اہلسنت کی گھنٹہ گھر سے کچہری تک لبیک یارسول اللہ ...

ملتان (سٹی رپورٹر)جماعت اہلسنت ملتان ڈویژن کے زیراہتمام تحفظ ختم نبوت بسلسلہ لبیک یارسول ؐاللہ ریلی گھنٹہ گھر چوک سے کچہری روڈ خواتین یونیورسٹی ریلی نکالی گئی جس کی قیادت جماعت اہلسنت پاکستان کے مرکزی امیر علامہ(بقیہ نمبر12صفحہ12پر )

سید مظہر سعید کاظمی، مرکزی نائب امیر علامہ سید طاہر سعید کاظمی، پنجاب کے ناظم اعلی علامہ محمد فاروق خان سعیدی، علامہ سید ارشد سعید کاظمی ، خانقاہ حضرت چادر والی سرکار ؒ کے سجادہ نشین پیر سید علی حسین شاہ، پیر سید شوکت حسین شاہ، قاری فیض بخش رضوی، علامہ سید رمضان شاہ فیضی، جے یو پی کے رہنما محمد ایوب مغل، علامہ سعید احمد فاروقی، ڈاکٹر محمد صدیق خان قادری، وسیم ممتاز ایڈووکیٹ، حافظ ظفر قریشی،مولانا ڈاکٹر ارشد بلوچ نے کی جبکہ ریلی میں دیگر رہنماؤں علامہ مطیع الرسول سعیدی،مولانا ڈاکٹر ارشد بلوچ، علامہ شفیق اللہ البدری، پیر عزیز رسول صدیقی، قاری بشیر احمد گولڑوی، حافظ ظفر قریشی، قیصر بھٹی مہروی، مفتی غلام یسین سعیدی ودیگر بھی موجود تھے ریلی میں جماعت اہلسنت کے ہزاروں کارکنوں نے شرکت کی اور اس موقع پر شرکاء نے ختم نبوت قانون میں ترمیم کے ذمہ داروں کو قرار واقعی سزا دینے اور وفاقی و صوبائی وزرائے قانون زاہد حامد، رانا ثناء اللہ کی فوری برطرفی کا مطالبہ کیا ریلی کے شرکاء سے جماعت اہلسنت کے مرکزی امیر علامہ سید مظہر سعید کاظمی نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی ہوش کے ناخن لیں اور اسلام آباد میں تحریک لبیک یارسول ؐاللہ کے مطالبات کو فوری طور پر تسلیم کیاجائے وفاقی و صوبائی وزراء قانون زاہد حامد، رانا ثناء اللہ کو فوری طور پر برطرف کیا جائے جب تک حکومت میں شامل کالی بھیڑوں کو نہیں نکالا جائے گا وہ چین سے نہیں بیٹھیں گے حکومت ہوش کے ناخن لے اگر سانحہ ماڈل ٹاؤن جیسی بربریت کی مثال قائم کی تو پاکستان کا امن قائم نہیں رہ سکے گا انہوں نے مزید کہا کہ اسلام آباد میں دھرنا دینے والے اکیلے نہیں ہیں بلکہ ملک بھر کے عاشقان مصطفی ؐ ان کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں حکومت تحریک لبیک یارسول ؐ اللہ کے گرفتار کارکنوں کو فوری طور پر رہا کرے اور ان پر درج جھوٹے مقدمات ختم کئے جائیں انہوں نے کہا کہ ہمارا مطالبہ جائز ہے اسی لئے حکومت میں شامل کالی بھیڑوں کو فوری طور پر نکالا جائے صرف یہ کہنا کہ تحفظ ختم نبوت کو مکمل طور پر بحال کر دیا گیا ہے کافی نہیں ہے اگر دھرنے کے شرکاء پر تشدد کیا گیا اور ان پر گولیاں چلائی گئیں تو ملتان میں چین سے نہیں بیٹھیں گے جماعت اہلسنت پنجاب کے ناظم اعلی علامہ محمدفاروق خان سعیدی نے کہا کہ حکومت دو وزیروں کو بچانے کے لئے کروڑوں مسلمانوں میں اشتعال پیدا نہ کرے ہم سیاست نہیں کر رہے ختم نبوت کی عزت و تکریم کا مسئلہ ہے خانقاہ حضرت چادر والی سرکار ؒ کے سجادہ نشین پیر سید علی حسین شاہ نے کہا کہ ناموس رسالت ؐ کی ریلی میں پیر نہیں فقیر بن کر آیا ہوں فیض آباد میں شرکاء پر طاقت کا استعمال کیا تو پھر وہ فیض آباد نہیں رہے گا بلکہ مصطفی آباد بن جائے گا اور آستانوں سے لاکھوں عقیدت مند تحفظ ناموس رسالت ؐ کے لئے سروں پر کفن باندھ کر باہر نکلیں گے جبکہ دیگر مقررین نے خطاب کرتے ہو ئے کہا کہ حکومت ختم نبوت میں ترمیم کی کوشش کے ذمہ داروں دو وزراء کو پیارا نہ کرے بلکہ انہیں ان کے عہدوں سے برطرف کرے اسلام آباد دھرنے میں بیٹھنے والوں کے خلاف حکومت جھوٹے پروپیگنڈے کر رہی ہے کہ وہ مسلح ہیں حالانکہ وہ مسلح نہیں بلکہ درودو سلام والے ہیں وہ گولیاں چلانے والے نہیں بلکہ گولیاں کھانے والے ہیں ان پر کوئی کڑا وقت آیاتو پوری پاکستان قوم ان کے شانہ بشانہ کھڑی ہوگی جبکہ ریلی کے اختتام پر علامہ سید مظہر سعید کاظمی نے دعا کرائی ۔

ریلی

مزید : ملتان صفحہ آخر