پولیو کے قطرے پینے سے مبینہ طور پر 7 ماہ کا بچہ جاں بحق

پولیو کے قطرے پینے سے مبینہ طور پر 7 ماہ کا بچہ جاں بحق

خانیوال (نمائندہ پاکستان) پولیو کے قطرے پینے سے مبینہ طور پر 7 ماہ کا بچہ جاں بحق۔ تفصیل کے مطابق نواحی گاؤں 169 دس آر کے جاں بحق بچے کے ورثاء نے مبینہ طور پر محکمہ صحت پر الزام عائد کیا کہ خانیوال میں جاری پولیو مہم کے دوران گزشتہ روز محکمہ صحت کی ٹیم نے میرے 7 ماہ کے بیٹے(بقیہ نمبر24صفحہ12پر )

کو پولیو کے قطرے پلائے جس کے چند منٹ بعد ہی میرا بیٹا جاں بحق ہوگیا چیف ایگزیکٹو آفیسر ہیلتھ ڈاکٹر ارشد کے مطابق وقوعہ کے فوری بعد محکمہ صحت کے اعلیٰ افسران موقع پر پہنچ گئے تھے بشارت علی کے سات ماہ کے بیٹے ذیشان کے ساتھ ساتھ اس کی تین سالہ بہن کو بھی پولیو کے قطرے پلائے گئے تھے جوکہ بالکل ٹھیک ہے پولیو کی ایک وائل سے 18 بچوں کو قطرے پلائے جاتے ہیں اس یونین کونسل میں جب محکمہ صحت کے افسران نے گھر گھر جاکر وزٹ کیا تو تمام بچے خیرو عافیت سے تھے پولیو کے قطروں سے کسی بھی بچے کو ری ایکشن نہیں ہوا ڈاکٹروں کی ٹیم کے مطابق بچہ دل کا دورہ پڑنے سے جاں بحق ہوا ہے۔ ڈاکٹر ارشد ملک کے مطابق مذکورہ بنیادی مرکز صحت کی لیڈی ڈاکٹر کے بچے کو قطرے پلا کر مہم کا آغاز کیا گیا تھا جس کا بچہ بالکل ٹھیک ہے۔ جاں بحق بچے کی نماز جنازہ ادا کرکے تدفین کردی گئی ہے۔

پولیو

مزید : ملتان صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...