شانگلہ ،ڈی ایچ کیو ہسپتال میں ایم ایس نہ ہونے سے مشکلات

شانگلہ ،ڈی ایچ کیو ہسپتال میں ایم ایس نہ ہونے سے مشکلات

الپوری(ڈسٹرکٹ رپورٹر)شانگلہ کے ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال الپوری میں گزشتہ آٹھ ماہ سے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ نہ ہونے سے ہسپتال میں تمام انتظامی امور اور کام ٹھپ ہوکر رہ گیا ہے، ہسپتال تباہی کے دھانے پر چلا گیا ،ہسپتال فنڈ ہونے کے باوجود شدید مالی بحران کا شکار قائم مقام ایم ایس کے پاس ڈی ڈی او اختیارات نہ ہونے کیوجہ سے تمام ڈاکٹروں اور سٹاف کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔مریضوں کا علاج کریں توکیسے ۔ اکثر ادویات باہر سے لانی پڑتی ہے جس کیلئے پیسے نہیں۔ مسیحاؤں کے مرکز کو مسیحا کی ضرورت ۔ڈی ایچ کیو ہستپال الپوری کے کوارڈنیشن کونسل کے صدر نیرو سرجن ڈاکٹر ممتازعلی کے قیادت میں وفد نے ڈپٹی کمشنر عبدالحمید خان اور رکن صوبائی اسمبلی حاجی عبدالمنعم کے ساتھ ملاقات میں ہسپتال کی ڈوبتی ہوئی حالات پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ایک طرف سٹاف کی کمی اور مزید تبادلوں سے ہسپتال تباہی کے د ھانے پر پہنچ گیا ہے اٹھ ماہ میں یہاں پر کوئی ایم ایس تعینات نہیں کیا گیا،قائم مقام ایم ایس کے پاس ڈی ڈی او پاؤر نہیں ہسپتال اس وقت شدید بحران کا شکار ہے ۔ضلع انتظامیہ شانگلہ اور منتخب نمائندے مسحاؤں کی مرکز کو مزید تباہی سے بچادیں ۔وفد کو یقین دھانی کراتے ہوئے ڈپٹی کمشنر عبدالحمید خان اور رکن صوبائی اسمبلی حاجی عبدالمنعم نے اپنی مکمل تعاون کی یقین دھانی کرائی اور کہا کہ ہسپتال میں میڈیکل سپرڈنٹ کی تقرری سمیت تمام مسائل کو ترجیحی پر حل کیا جائیگا ۔ وفد میں نیروسرجن پرنس ڈاکٹر ممتاز علی کو کوارڈنیشن کا صد ر کے علاوہ میڈیکل افسر چیئرمین ڈاکٹر شریف اللہ ، سینئر نائب صدر میل نرس امجد علی ہاشمی ، جنرل سیکرٹری محبوب علی ،محمد علی ، شوکت علی ،لیاقت علی ،ڈاکٹر محمد علی ،صلاح الدین،عطاء اللہ ،احسان عالم اور اکبرعلی شامل تھے۔۔

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...