شعبہ تعلیم کا فروغ معاشرے کی اجتماعی ذمہ داری ہے،ڈی سی جہلم

شعبہ تعلیم کا فروغ معاشرے کی اجتماعی ذمہ داری ہے،ڈی سی جہلم

جہلم( نامہ نگار) تعلیمی اصلاحات پروگرام کی کامیابی کا انحصار ایجوکیشن افسروں کی محنت اور لگن پر منحصرہے۔ شعبہ تعلیم کا فروغ معاشرے کی اجتماعی ذمہ داری ہے۔بنیادی تعلیم کی سہولیات میں اضافہ کرکے مطلوبہ اہداف حاصل کئے جاسکتے ہیں۔ تعلیمی اعتبار سے ضلع جہلم کا شمار پنجاب کے ٹاپ فائیواضلاع میں ہوتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار ڈپٹی کمشنر جہلم اقبال حسین خان نے محکمہ تعلیم کے افسروں کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ ڈپٹی کمشنر جہلم نے کہا کہ حکومت پنجاب تعلیمی شعبے کی ترقی کیلئے انقلابی اقدامات کر رہی ہے اور اس مقصد کیلئے 230ارب روپے کے فنڈز مہیا کر کے بنیادی اور اعلیٰ سہولیات عام کر رہی ہے۔مقصد شرح خواندگی میں اضافہ اور معیار تعلیم بہتر بنانا ہے۔ ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ نے گزشتہ ماہ اساتذہ و طلبہ کی حاضری، انتظامی افسران کے دورہ جات اور سہولیات کی فراہمی کے حوالے سے حکومت کے مقرر کردہ اہداف کامیابی سے حاصل کئے ہیں۔ضلع جہلم کے تعلیمی انڈی کیٹرز حوصلہ افزاء ہیں تاہم ایل این ڈی مزید بہتر بنانے کیلئے اب بھی بہت کچھ کرنا باقی ہے۔اقبال حسین خان نے کہا کہ حالیہ عرصے کے دوران سرکاری سکولوں کی استعداد کار میں نمایاں اضافہ ہوا ہے تاہم اب بھی کئی پہلوؤں میں بہتری کی گنجائش ہے۔ ہائی سکولوں میں سائنس لیبز کے قیام اور آئی ٹی ٹیچرز کی تعیناتی سے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے فروغ میں مدد مل رہی ہے۔ یہی وزیراعلیٰ پنجاب کا ویژن ہے۔ ڈپٹی کمشنر نے ہدایت کی کہ سرکاری سکولوں میں کمزور طلبہ و طالبات پر خصوصی توجہ دی جائے ۔ ہیڈ ٹیچرز این ایس بی فنڈز کا درست استعمال یقینی بنائیں ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...