سول ہسپتال جہلم،مریضوں،لواحقین سے نارواسلوک ہونے لگا

سول ہسپتال جہلم،مریضوں،لواحقین سے نارواسلوک ہونے لگا

جہلم(نامہ نگار)سول ہسپتال میں مریض ولواحقین کے ساتھ بھیڑ بکریاں جیسا سلوک ہونے لگا ہے ،بلڈنگ کی تعمیر نو کی آڑ میں مریض سارا سارا دن ڈاکٹروں کے کمروں کی تلاش میں مارے مارے پھرتے ہیں ،گھنٹوں کی مسافت تہہ کر کے درجنوں کلومیٹر کا سفر کرنے والے ضعیف العمر مریض پرچی کی خاطر لائینوں میں کھڑا رہنے کے بعد پرائیویٹ ہسپتالوں سے علاج کروانے پر مجبور ہیں ،تفصیلات کے مطابق ڈی ایچ کیو ہسپتال جہلم کی بلڈنگ کی تعمیر نو کا کام جاری ہے لیکن ناقص منصوبہ بندی سے ایک ساتھ ہی تمام بلڈنگ میں توڑ پھوڑ کر دی گئی ہے جس کی وجہ سے آپریشن تھیٹر ، او ،پی ،ڈی سمیت اکثر ضروری شعبے بند ہو گئے ہیں لیکن ضلع بھر کے دور دراز کے علاقوں سے درجنوں کلومیٹر کی مسافت گھنٹوں میں تہہ کرکے آنے والے مریض اور لواحقین پہلے تو پرچی حاصل کرنے کی خاطر گھنٹوں لائینوں میں کھڑے رہتے ہیں اگر بروقت پرچی مل جائے تو چیک آپ کروانے کے لیے ڈاکٹر کی تلاش شروع ہو جاتی ہے بعض مریض پرچی نہ ملنے کی بنا پر پرائیویٹ ہسپتالوں سے علاج کروانے پر مجبور ہیں مریض ولواحقین نے اعلیٰ حکام سے پر زور اپیل کی ہے کہ وہ فوری نوٹس لے کر کاروائی کریں

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر