بلیک لا ڈکشنری کے مطابق ٹرسٹ اثاثے کی تعریف میں آتا ہے،عمران ،ترین کو نااہل قرار دیاجائے،حنیف عباسی نے تحریری جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا

بلیک لا ڈکشنری کے مطابق ٹرسٹ اثاثے کی تعریف میں آتا ہے،عمران ،ترین کو نااہل ...
بلیک لا ڈکشنری کے مطابق ٹرسٹ اثاثے کی تعریف میں آتا ہے،عمران ،ترین کو نااہل قرار دیاجائے،حنیف عباسی نے تحریری جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)عمران خان اورجہانگیرترین نااہلی کیس میں حنیف عباسی کی جانب سے تحریری جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا گیا،تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں عمران خان اور جہانگیر ترین نااہلی کیس کی سماعت ہوئی،چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں 3 رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی،حنیف عباسی کے وکیل اکرم شیخ نے تحریری جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا ۔

تحریری جواب کے مطابق بلیک لاڈکشنری کے مطابق ٹرسٹ اثاثے کی تعریف میں آتاہے،ٹرسٹ اورآف شورکمپنی ایسے اثاثے نہیں جوظاہرنہ کئے جائیں،جہانگیرترین ٹرسٹ کی ملکیت سے انکارنہیں کرسکتے۔

جواب میں کہا گیا ہے کہ آف شورکمپنی عمران خان کی ہدایت پرکام کرتی تھی،وہ براہ راست مالک ہیں،جہانگیرترین نے کاغذات نامزدگی میں ٹرسٹ بطوراثاثہ ظاہرنہیں کیا،عمران خان نے آف شورکمپنی بطوراثاثہ ظاہرنہیں کی،عدالت عظمیٰ سے استدعا ہے کہ عمران خان اورجہانگیرترین کونااہل قراردیاجائے۔

وکیل حنیف عباسی نے کہا کہ عدالت نے فریقین کوتحریری معروضات ایک ہفتے میں جمع کرانے کاحکم دیاتھا،عدالت کے حکم پراپناتحریری جواب جمع کرادیا،اب عدالت پرمنحصر ہے محفوظ شدہ فیصلہ کب سناتی ہے۔

مزید پڑھیں:۔اثاثہ جات ریفرنس،اسحاق ڈار کی حاضری سے استثنیٰ اور نمائندہ مقرر کرنے کی درخواست مسترد،مفرور قرار دیدیا گیا

مزید : قومی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...