’’مقتول نے ہیلو کہا اور ہوا میں غائب ہوگیا‘‘ایک مشہور ادیبہ کے ساتھ پیش آنے والا حیرت انگیز واقعہ

’’مقتول نے ہیلو کہا اور ہوا میں غائب ہوگیا‘‘ایک مشہور ادیبہ کے ساتھ پیش ...
’’مقتول نے ہیلو کہا اور ہوا میں غائب ہوگیا‘‘ایک مشہور ادیبہ کے ساتھ پیش آنے والا حیرت انگیز واقعہ

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نیویارک(ویب ڈیسک )مارجری لارنس سنکس اپنے دور کی ایک مشہور ادیبہ تھی ۔انہوں نے ایک انٹرویو میں ذکر کیا تھا کہ ان کی زندگی میں ایک حیرت انگیز واقعہ رونما ہوا تھاجسے وہ کبھی نہیں بھلا سکیں۔تادم مرگ وہ اس پہلو پر کام بھی کرتی رہیں کہ کوئی انسان ہوا میں کیسے تحلیل ہوسکتا ہے۔کئی کتابیں لکھنے کے باوجود حقیقت تک نہیں پہنچ پائی تھیں۔ان کے مطابق اس وقت ان کی عمر سترہ سال تھی جب وہ اپنی ایک سہیلی سے ملنے گئی اور اس کے ڈرائنگ روم میں بیٹھی۔ اس وقت اس کی سہیلی کہیں چلی گئی تھی۔ دفعتاً اس نے ایک ادھیڑ عمر شخص کو اندر آتے دیکھا جس کے بدن پر بہت قدیم لباس تھا۔ مارجری نے اٹھ کر اسے ’’ہیلو‘‘ کہا۔ وہ آدمی خود بخود اس کے سامنے ہوا میں تحلیل ہوگیا۔ جب اس کی سہیلی واپس آئی تو اس نے مارجری کو عجیب متوحش کیفیت میں پایا۔ استفسار پر مارجری نے جب اس آدمی کا حلیہ بتایا تو اس کی سہیلی ششدر رہ گئی۔ کیونکہ یہ حلیہ اس کے مکان کے پہلے کرائے دار کا تھا جسے چند برسوں قبل اسی کمرے میں قتل کر دیا گیا تھا۔

مزید : مافوق الفطرت