قومی اسمبلی سے شیریں مزاری کی وہ اہم ترین چیز ’چوری‘ ہو گئی جس سے جدا ہونے کا کوئی سیاستدان سوچ بھی نہیں سکتا

قومی اسمبلی سے شیریں مزاری کی وہ اہم ترین چیز ’چوری‘ ہو گئی جس سے جدا ہونے کا ...
قومی اسمبلی سے شیریں مزاری کی وہ اہم ترین چیز ’چوری‘ ہو گئی جس سے جدا ہونے کا کوئی سیاستدان سوچ بھی نہیں سکتا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )قومی اسمبلی میں پیپلز پارٹی کی جانب سے ’نا اہل شخص پارٹی کا سربراہ یا پارلیمنٹ کا ممبر نہیں بن سکتا ‘ بل پیش کیا جارہا تھا کہ اسی دوران شیریں مزاری کی کر سی ’چوری ‘ ہو گئی ۔

تفصیلات کے مطابق پیپلز پارٹی کے رہنما نوید قمر بل پیش کر رہے تھے کہ اسی دوران پاکستان تحریک انصاف کی رہنما شریں مزاری کی آواز آئی کہ میری کرسی یہاں سے غائب ہو گئی ہے جس پر سپیکر قومی اسمبلی میدان آئے اور انہوں نے کہا کہ ’آپ کے دائیں یا بائیں ‘بیٹھے ہوئے افراد پر شک ہے اس کی انوسٹی گیشن کروا لیتے ہیں کہ کر سی نے چھپائی ہے ۔قومی اسمبلی میں بل پیش کر دیاہے تاہم وزیر قانون زاہد حامد نے بل کی مخالفت کر دی ہے ۔

مزید : قومی