افغان صوبہ ہلمندمیں نیٹو کی پہلی فضائی کارروائی، منشیات کی تنصیبات تباہ

افغان صوبہ ہلمندمیں نیٹو کی پہلی فضائی کارروائی، منشیات کی تنصیبات تباہ
افغان صوبہ ہلمندمیں نیٹو کی پہلی فضائی کارروائی، منشیات کی تنصیبات تباہ

کابل(این این آئی)افغانستان اور مقامی اتحادیوں کے تعاون سے منشیات پیدا کرنے والی تنصیبات اور ذخائر کو تباہ کرنے کی غرض سے امریکہ نے پہلی فوجی کارروائی کی ہے تاکہ پھر سے کمربستہ طالبان کو آمدن کے اس بڑے ذریعے سے محروم کیا جا سکے۔

’قطر ہم نے بنایا تھا، ہم اسے واپس لے کر رہیں گے‘ سعودی عرب سے کس نے یہ اعلان کردیا؟ پوری عرب دنیا میں کھلبلی مچ گئی

امریکی ٹی وی کے مطابق امریکی فوج اور نیٹو کے ’رزولوٹ سپورٹ فوجی مشن‘ کے کمانڈر جنرل جان نکلسن نے اتحاد کی جانب سے منشیات کے انسداد کے خلاف پہلی فضائی کارروائی کی تفصیل بتائی۔اْنھوں نے کہا کہ بمباری کے نتیجے میں ہلمند میں طالبان کی منشیات کی پیداوار سے وابستہ تنصیبات کو تباہ کیا گیا، جو افغانستان کے جنوبی صوبے کا علاقہ ہے جہاں وسیع رقبے پر پوست کی فصل کاشت کی جاتی ہے تاکہ باغی گروپ کو آمدن کے اہم ذریعے محروم کیا جاسکے۔جنرل نکلسن نے کہاکہ ہم نے اْن لیباریٹریوں کو نشانہ بنایا جہاں پوست سے ہیروئن تیار کی جارہی تھی۔ ہم نے ذخیرے کی تنصیبات کو ہدف بنایا جہاں وہ اپنی مصنوعات کو آخری شکل دیتے ہیں، جہاں وہ اپنی رقم رکھتے ہیں اور جہاں اْن کا کمان اور کنٹرول نظام ہے۔20 کروڑ ڈالر سے زائد کی غیر قانونی معیشت تباہ کی گئی جو رقوم طالبان کی جیبوں میں جاتیں۔

اْنھوں نے کہا کہ فضائی کارروائی سے افغان کسانوں کو نشانہ نہیں بنایا گیا۔کارروائی کو احتیاط سے کیا جارہا ہے، تاکہ نشانے کے اہداف کے علاوہ کم سے کم جانی نقصان ہو اور شہری آبادی محفوظ رہے۔نکلسن نے کہا کہ ہم اِن منشیات کی سمگلنگ کی تنظیموں پر حملے جاری رکھیں گے، جو طالبان کی مدد کرتے ہیں اور دیگر دہشت گرد تنظیموں کو نشانہ بنانے رہیں گے۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...