سعودی عرب میں 8ہزار سال پرانے پتھر دریافت، لیکن ان پر کیا چیز بنی ہوئی تھی؟ دیکھ کر سائنسدانوں کے بھی منہ کھلے کے کھلے رہ گئے کیونکہ۔۔۔

سعودی عرب میں 8ہزار سال پرانے پتھر دریافت، لیکن ان پر کیا چیز بنی ہوئی تھی؟ ...
سعودی عرب میں 8ہزار سال پرانے پتھر دریافت، لیکن ان پر کیا چیز بنی ہوئی تھی؟ دیکھ کر سائنسدانوں کے بھی منہ کھلے کے کھلے رہ گئے کیونکہ۔۔۔

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) انسان نے بہت سے جانوروں کو سدھا کر پالتو بنایا ہے لیکن ان میں سے کتے کو ایک خاص اہمیت حاصل ہے۔ اس کی بنیادی وجہ کتے کی انسان کے ساتھ غیر معمولی دوستی اور وفاداری ہے۔ شاید یہی وجہ ہے کہ کتا عہد قدیم سے ہی انسانوں کے ساتھ رہتا چلا آیا ہے، البتہ کسی کے وہم و گمان میں بھی نا تھا کہ دراصل یہ تعلق ہزاروں سال قدیم ہے۔ یہ حیرت انگیز انکشاف سعودی عرب میں دریافت ہونے والے 8000 سال قدیم پتھروں سے ہوا ہے، جن پر کندہ کی گی تصاویر میں کتے اور انسان اکٹھے نظر آتے ہیں۔

روس میں سائنسدانوں کو زمین میں دبائی درجنوں کتوں کی 4 ہزار سال پرانی لاشیں مل گئیں، موت سے پہلے ان کے ساتھ کیا کیا گیا؟ آج کا کوئی انسان تصور بھی نہیں کرسکتا

میل آن لائن کے مطابق ان پتھروں پر کندہ ایک تصویر میں ایک شکاری تیر چلاتا ہوا نظر آتا ہے جبکہ اس کے ساتھ 13 کتوں کا ایک گروہ ہے جن میں سے دو کے گلے میں رسی بھی دیکھی جا سکتی ہے، جسے ماہرین اس بات کا ثبوت قرار دیتے ہیں کہ اس دور میں بھی کتوں کو پالتو جانور کے طور پر کھا جاتا تھا۔ تحقیق کاروں کا یہ بھی کہنا ہے کہ سعودی صحرا سے دریافت ہونے والے پتھروں پر کندہ یہ تصاویر کتوں کی قدیم ترین تصاویر ہیں۔ ماہرین آثار قدیمہ نے خیال ظاہر کیا ہے کہ سعودی عرب کے اس صحرا میں تقریباً 10 ہزار سال قبل بھی انسان کتوں کی مدد سے شکار کیا کرتے تھے۔ پتھروں پر کتوں کے علاوہ بھیڑوں اوربکریوں کی تصاویر بھی ملی ہیں۔

جرمنی کے میکس پلانک انسٹی ٹیوٹ کے سائنسدانوں کی ایک ٹیم سعودی صحرا میں گزشتہ تین سالوں کے دوران اس طرح کی 1400 سے زائد تصاویر پتھروں پر کندہ کی ہوئی دریافت کرچکی ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اس صحرائی علاقے میں پتھروں پر ہزاروں تصاویر کندہ کی گئی ہیں جن میں سے تقریباً 349 کتوں کی تصاویر ہیں۔ ان میں سے 156 شویمس اور 193 جباہ کے علاقے میں دریافت ہوئیں۔

مزید : عرب دنیا