حسن علی کی کارکردگی بنگلہ دیش سے ہضم نہ ہوئی ،ایسا قدم اٹھا لیا کہ سن کر پاکستانیوں کی حیرت کی انتہا نہ رہے گی

حسن علی کی کارکردگی بنگلہ دیش سے ہضم نہ ہوئی ،ایسا قدم اٹھا لیا کہ سن کر ...
حسن علی کی کارکردگی بنگلہ دیش سے ہضم نہ ہوئی ،ایسا قدم اٹھا لیا کہ سن کر پاکستانیوں کی حیرت کی انتہا نہ رہے گی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )نوجوان پاکستانی فاسٹ باو¿لر حسن علی بنگلہ دیش پریمیئر لیگ کے پہلے ہی میچ میں شرکت کے بعد مشکل میں پھنس گئے ہیں اور ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر ان پر جرمانہ عائد کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز کومیلا وکتورینز اور ڈھاکا ڈائنامائٹس کے درمیان میچ میں حسن علی نے شرکت کر کے بنگلہ دیش پریمیئر لیگ کے رواں ایڈیشن میں پہلا میچ کھیلا لیکن اسی میچ میں انہیں ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا گیا۔20 نومبر کو کومیلا وکٹورینز کی نمائندگی کرتے ہوئے پاکستانی فاسٹ باولر بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کے کھلاڑیوں کیلئے ضابطہ اخلاق کے لیول ون کی خلاف ورزی کے مرتکب ٹھہرے۔

بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ کی جانب سے بیان میں کہا گیا کہ مصدق حسین کو آوٹ کرنے پر ڈریسنگ روم کی جانب اشارہ کرنے پر فیلڈ امپائرز، تھرڈ امپائر اور میچ ریفری نے حسن علی کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا مرتکب قرار دیا اور ان پر میچ فیس کا 25فیصد جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔بیان میں کہا گیا کہ حسن علی نے اپنی غلطی تسلیم کرتے ہوئے میچ ریفری سمیع الرحمان کی جانب سے دی گئی سزا کو بھی تسلیم کر لیا جس کے بعد باقاعدہ سماعت کی ضرورت محسوس نہیں ہوئی۔اس سزا کے ساتھ ساتھ حسن کے ڈسپلنری ریکارڈ میں دو منفی پوائنٹس بھی جمع ہو گئے ہیں۔یاد رہے کہ مذکورہ میچ میں حسن علی نے تباہ کن باو¿لنگ کرتے ہوئے 20 رنز کے عوض پانچ وکٹیں لے کر ڈھاکا ڈائنامائٹس کی بیٹنگ کو تہس نہس کردیا تھا اور میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے تھے۔

مزید : کھیل