ایس سی او اورای ڈاٹ کومیں ٹیلی کام انفراسٹرکچر کی ترقی کیلئے سمجھوتہ

ایس سی او اورای ڈاٹ کومیں ٹیلی کام انفراسٹرکچر کی ترقی کیلئے سمجھوتہ

  



لاہور(پ ر) آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان میں کثیرالدرجاتی بیک ہال کنیکٹویٹی کے ساتھ سب سے بڑے مربوط نیٹ ورک کے حامل ادارہ سپیشل کمیونیکیشنز آرگنائزیشن (ایس سی او) اور صف اول کی ٹیلی مواصلات کی انفراسٹرکچر سروسز کمپنی ایڈوٹکو پاکستان (پرائیویٹ) لمیٹڈ کے مابین آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان میں ٹیلی کام انفراسٹرکچر کو ترقی دینے کیلئے ایک سمجھوتہ ہو گیا ہے۔ ٹیلی کام اور موبائل رابطے پاکستان کی پائیدار سماجی و معاشی ترقی کیلئے انتہائی اہم ہیں یہی وجہ ہے کہ ایس سی او آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان کے دُوردراز علاقوں میں موبائل رابطوں کی ترقی کو فروغ دے کر اور صارفین کے ساتھ تعلق کو مضبوط تر کرتے ہوئے لوگوں کے رابطوں کو موثر بنانے کیلئے کوشاں ہے اور اس سلسلے میں نیٹ ورک اور کسٹمر پر مرکوز ایک حکمت عملی پر عمل پیرا ہے۔ڈائریکٹر جنرل ایس سی او میجر جنرل علی فرحان ہلال امتیاز (ملٹری) نے اس موقع پر اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایس سی او آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان محروم اور پسماندہ علاقوں کے باسیوں کو سہولت بہم پہنچانے کیلئے ٹیلی کام انفراسٹرکچر کو ترقی دے کر اس دوردراز پہاڑی خطے میں کنیکٹویٹی میں اضافہ اور رابطوں کو مستحکم کرے گا۔ ایس سی او ہر زاویے سے ٹیلی کام ٹیکنالوجی کی فراہمی یقینی بنائے گا۔

تاکہ آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان کے عوام ڈیجیٹل ٹیکنالوجی کے ثمرات سے صحیح طور پر مستفید ہو سکیں۔

کنٹری منیجنگ ڈائریکٹر ایڈوٹکو پاکستان عارف حسین نے اس معاہدے کے بارے میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان کے علاقے میں ایس سی او کی وسیع کارگزاری سے ہمیں یہ حوصلہ ملا کہ ہم اس خطے کے مختلف مقامات پر نیٹ ورک کی وسعت، گنجائش اور استعداد کار کو مزید بہتر بنانے کیلئے اعلیٰ اور جدید حلوں کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔ ہماری ہمیشہ سے یہ حکمت عملی رہی ہے کہ ہم ٹیلی کام انڈسٹری کی نمایاں اور اہم کمپنیوں کے ساتھ اشتراک عمل کریں۔

مزید : کامرس