پاکستان کیساتھ مظبوط تجارت تعلقات کا فروغ چاہتے ہیں سفیراردن

پاکستان کیساتھ مظبوط تجارت تعلقات کا فروغ چاہتے ہیں سفیراردن

  



 اسلام آباد (کامرس ڈیسک) پاکستان میں تعینات اردن کے سفیر ابراہیم یالا محمد المدانی نے کہا کہ اردن پاکستان کے ساتھ مضبوط تجارتی تعلقات فروغ دینا چاہتا ہے کیونکہ دونوں ممالک ایک دوسرے کے ساتھ باہمی تجارت کو فروغ دینے کی بہتر صلاحیت رکھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اردن اور پاکستان کے مابین عمدہ سیاسی اور دفاعی تعلقات قائم ہیں تاہم ضرورت اس بات کی ہے کہ دونوں تجارتی و اقتصادی تعلقات کو بہتر کرنے پر زیادہ توجہ دیں جس سے دونوں کیلئے فائدہ مند نتائج برآمد ہوں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے دورہ کے موقع پر تاجر برادری سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اقتصادی تعلقات کو بہتر کرنے کیلئے دونوں ممالک کے درمیان مزید اعلیٰ سطحی رابطوں کی ضرورت ہے۔اردن کے سفیر نے کہا کہ اردن پاکستان سے ٹیکسٹائل مصنوعات، میڈیکل کا سامان، ادویات، چاول اور چینی سمیت چند مصنوعات امپورٹ کر رہا ہے جبکہ پاکستان اردن کو مزید مصنوعات برآمد کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگلے سال کے پہلے کوارٹر میں اردن اور پاکستان کے مشترکہ وزارتی کمیشن کا اجلاس اسلام آباد میں منعقد ہو گا اور اس موقع پر اردن کا ایک تجارتی وفد بھی پاکستان آئے گا۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ دونوں ممالک کی تاجر برادری کے درمیان براہ راست ملاقاتوں سے اردن اور پاکستان کے درمیان تجارت کو بہتر کرنے کے نئے مواقع تلاش کرنے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے تجویز دی کہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اپنا ایک وفد اردن لے جائے یا اردن چیمبر آف کامرس کو پاکستان مدعو کرے جس سے دونوں ممالک کے نجی شعبوں کے درمیان روابط بہتر ہوں گے۔ انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ ان کا سفارتخانہ ان کوششوں میں ہر ممکن مدد کرے گا۔اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر محمد احمد وحید نے اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بہتر صلاحیت کے باوجود پاکستان اور اردن کی باہمی تجارت بہت کم ہے جس کو بہتر کرنے کیلئے دونوں جانب سے مزید کوششوں کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اوراردن سائنس و ٹیکنالوجی، کھاد، انفارمیشن ٹیکنالوجی و ٹیلی کمیونیکیشن، انڈسٹری، بینکنگ و فنانس، صحت و تعلیم، ادویات، زراعت،لائیو سٹاک، توانائی اور فشریز سمیت متعدد شعبوں میں ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کر سکتے ہیں لہذا ضرورت اس بات کی ہے کہ دونوں ممالک کثرت کے ساتھ تجارتی وفود کا تبادلہ کرنے کی حوصلہ افزائی کریں تا کہ مشترکہ تعاون کے تمام ممکنہ مواقعوں سے فائدہ اٹھایا جا سکے۔ محمد احمد وحید نے کہا کہ پاکستان کی معیشت کے متعدد شعبوں میں غیر ملکی سرمایہ کاروں کیلئے پرکشش مواقع موجود ہیں۔

لہذا اردن کے سرمایہ کار پاکستان کا دورہ کر کے جوائنٹ وینچرز و سرمایہ کاری کے مواقع تلاش کریں۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اردن چیمبر آف کامرس کے وفد کی میزبانی کیلئے تیار ہے اور ان کو پاکستان کے نجی شعبے کے ساتھ ملانے میں ہر ممکن تعاون کرے گا۔ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر سیف الرحمٰن خان، میاں شوکت مسعود، محمد اسلم کھوکھر، خالد چوہدری اور دیگر نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور دونوں ممالک کے درمیان تجارت کو بہتر کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

مزید : کامرس