حکومت ایف پی سی سی آئی کی مشاورت سے پالیسیاں مرتب کرے،زبیرطفیل

حکومت ایف پی سی سی آئی کی مشاورت سے پالیسیاں مرتب کرے،زبیرطفیل

  



کراچی (این این آئی)یونائٹیڈ بزنس گروپ کے سیکریٹری جنرل اورایف پی سی سی آئی کے سابق صدر زبیرطفیل نے کہاہے کہ اس وقت اہم ترین ضرورت ہے کہ ایس ایم ای سیکٹرکو تقویت فراہم کی جائے اور انہیں آسان شرائط پر قرضوں کی فرا ہمی ہوتاکہ ملک بھر میں ایس ایم ایز کا جال بچھ سکے جبکہ لارج مینوفیکچرنگ سیکٹر کیلئے بھی حکومت فیڈریشن چیمبر آف کامرس کی مشاورت سے پالیسیاں مرتب کرے کیونکہ لارج مینوفیکچرنگ سیکٹرکی گروتھ پہلے ہی کم ہوچکی ہے۔انہوں نے ان خیالات کا اظہارایف پی سی سی آئی الیکشن کے سلسلے میں سکھر ایوانِ صنعت و تجارت کے دورے کے موقع پر چیمبر کے ممبران سے گفتگو میں کہی۔

اس موقع پرایف پی سی سی آئی کے صدر انجینئر داروخان، خالدتواب،فیڈریشن الیکشن میں یو بی جی کی جانب سے صدراتی امیدوار ڈاکٹرنعمان بٹ،امیدوار برائے سینئر نائب صدر حنیف گوہر،ریاض الدین شیخ، ممتازشیخ، ذوالفقار شیخ،شکیل احمدڈھینگڑا، وقارمحمود خان، محمد اسلام مغل اوردیگرموجود تھے۔

، چوہدری زاہد اقبال، ایم این اے سکھر نعمان اسلام شیخ،ایڈیشنل آئی جی ڈاکٹر جمیل احمد،ڈپٹی کمشنر سکھر غلام مرتضیٰ شیخ سمیت خیرپور،شکارپور،لاڑکانہ،نوابشاہ، دادو،جامشوروکے صدور،نائب صدور و ممبران اور اس کے علاوہ سکھر چیمبر آف کامرس کے سابق صدور،سینئر نائب صدور،نائب صدور نے شرکت کی۔ زبیرطفیل نے کہا کہ ملک میں مہنگائی میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے جس کی طرف حکومت کو سنجیدہ اقدامات کرنے کی ضرورت ہے، تاجر، صنعتکاراورایکسپورٹرز ملک کا سرمایہ ہیں اورمشکل ترین حالات میں بھی کاروبار جاری رکھتے ہوئے جہاد کررہے ہیں،انہیں اچھے دنوں کا انتظارہے،حکومت کوچا ہیے کہ وہ مہنگائی پر قابو پانے کے اقدامات کرے،ایکسپورٹ بڑھانے پر توجہ دی جائے اور نئی سرمایہ کاری کی راہ میں رکاوٹیں حائل نہ کی جائیں۔زبیرطفیل نے کہا کہ ایف پی سی سی آئی کے الیکشن27دسمبر کو ہونگے اور مسلسل 5سال شکست کھانے والا گروپ ایک بار پھر یو بی جی کے مدمقابل ہے مگر اسے ملک بھر سے بمشکل چند امیدوار ہی دستیاب ہوسکے ہیں اور ان امیدواروں کوبھی یقین ہے کہ وہ شکست سے دوچار ہونگے کیونکہ 90فیصدسے زائد ووٹرز ہمارے گروپ کے ساتھ ہیں اورجو ہمارے لیڈران ایس ایم منیر اور افتخار علی ملک کی جدوجہدکا ثمر ہے۔خالدتواب نے کہا کہ فیڈریشن چیمبر اب کسی کی ذاتی جاگیر نہیں بلکہ بزنس کمیونٹی کا سرمایہ ہے جس کی ہم سب ملکر حفاظت کررہے ہیں،یو بی جی کی قیادت نے 5 سال پہلے فیڈریشن چیمبر آف کامرس سے لوٹ مار مافیا کا صفایا کیا تھا اور آج یہ ادارہ محفوظ ہاتھوں میں ہے۔ فیڈریشن کے صدر انجینئر دارو خان اچکزئی نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ ملکی معاشی حالات پر فیڈریشن پاکستان ایوانہائے صنعت و تجارت وفاقی حکومت باالخصوص وزارتِ خزانہ اور وزیرِ اعظم کو اپنے تحفظات سے آگاہ کرچکی ہے اور معاشی سرگرمیوں کی بحالی کیلئے اپنی تجاویز پیش کرنے کے ساتھ ساتھ مزید اقدامات پر غور کر رہی ہے،پاکستان کی معیشت کی کمزوری سب اداروں کو کمزور کرنے کا باعث ہے جبکہ فارن پالیسی بھی مطلوبہ نتائج دینے سے قاصر رہی ہے،بین الاقوامی برادری میں اثر و رسوخ بڑھانے کیلئے ہمیں پاکستان کی معیشت کو مضبوط بنیادوں پر کھڑا کرنا ہوگا۔ فیڈریشن کے صدارتی اْمیدوار ڈاکٹر نعمان ادریس بٹ نے پاکستان کی تاجر برادری کو درپیش موجودہ مشکلات کو حل کرنے اور اقتصادی سرگرمیوں کی بحالی اور مزید فروغ میں اہم کردار ادا کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔ قبل ازیں صدرِ ایوان محمد رضوان الحق ملک نے مہمانانِ گرامی القدر کا خیر مقدم کرتے ہوئے آج کے دن کو سکھر کی تاجر برادری کیلئے نہایت اہم قرار دیتے ہوئے کہا کہ سکھر سے برآمدات بڑھانے کیلئے یہاں پر ڈرائی پورٹ اور ایکسپو سینٹرکے قیام کے ساتھ ساتھ سکھر ریجن کے تاجروں کے مسائل کو حل کرنے میں سکھر ایوانِ صنعت وتجارت کا بھرپور دے تاکہ سکھر کی تجارتی اور صنعتی برادری ملکی معیشت کے استحکام میں اپنا کردار ادا کرسکیں۔ تقریب میں آنیوالے مہمانوں کو سندھ کی ثقافتی سندھی ٹوپی، اجرک اور شیلڈ کے تحائف پیش کئے گئے۔ اس کے علاوہ سکھر چیمبر آف کامر س کے سابق صدور کو اْن کی خدمات کے اعتراف میں شیلڈز پیش کی گئیں۔

مزید : کامرس