گھریلو ناچاقی کے مقدمات میں اضافہ،ایک ماہ میں 800بچے والدین کی شفقت سے محروم

 گھریلو ناچاقی کے مقدمات میں اضافہ،ایک ماہ میں 800بچے والدین کی شفقت سے محروم

  



لاہور(نامہ نگار)لاہور کی فیملی عدالتوں میں گھریلو ناچاقی کے مقدمات دائر کرنے کی شرح میں اضافہ ہونے لگاہے،واضح رہے کہ گھریلو ناچاقی کی بنا پر ایک ماہ میں 800بچے ماں اور باپ کی شفقت سے محروم ہو گئے ہیں، عدالتوں کی جانب سے 2ہزار خواتین کو خلع اور میرٹ کی بنا پر طلاق کی ڈگریاں جاری کی گئی ہیں،روزانہ 10 سے 15دعوے گھریلو ناچاکی کی بنا پردائر کئے جارہے ہیں،اسی وجہ سے مقدمات کی تعداد زیادہ ہونے پر گارڈین ججوں کی عدالتوں کو بھی فیملی عدالتوں کا درجہ دے دیا گیاہے،جس سے سول کورٹ میں فیملی کی عدالتوں کی تعداد 23 کر دی گئی ہے۔اس وقت عدالتوں میں ایک ماہ کے دوران 31ہزار 75مقدمات زیر التوا ء ہیں،عدالتوں کی جانب سے ایک ماہ میں 4 ہزار 486مقدمات کے فیصلے کئے گئے ہیں ِوکلاء کا کہناہے کہ عدالتوں میں خلع کی بنیاد پر زیادہ دعوے دائر ہو رہے ہیں جو کہ تشویشناک ہے۔

مزید : علاقائی