جنرل بس سٹینڈ‘ نادہندگان کا سیلیں توڑ کر دکانوں پر پھر قبضہ

جنرل بس سٹینڈ‘ نادہندگان کا سیلیں توڑ کر دکانوں پر پھر قبضہ

  



ملتان (سپیشل رپورٹر‘ نیوز رپورٹر) ملتان جنرل بس انتظامیہ کی طرف سے سیل کی جانیوالی 40دکانوں کی سیلیں دوکانداروں نے توڑ دی ہیں اور کار سرکار میں  مداخلت کرتے ہوئے دکانوں  پر قبضہ کر لیا ہے، جنرل بس اسٹینڈ انتظامیہ کی جانب سے دوبارہ سیل کرنے کی تیاریوں پر ڈیفالٹرزنے (بقیہ نمبر10صفحہ12پر)

انتظامیہ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا، ایڈمنسٹریٹر جنرل بس اسٹینڈ کامران بخاری نے لیگل ایڈوائزر کو طلب کر لیا ہے اور قانونی کاروائی تیز کرنے کی ہدایت کردی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ چند روز قبل جنرل بس اسٹینڈ انتظامیہ نے حکم امتناعی خارج ہونے پر 5کروڑ روپے کے ڈیفالٹرز کے خلاف کریک ڈاون کیا گیا تھا اور 40دوکانیں سیل کردی گئی تھیں  ، گذشتہ روز تاجروں نے دوکانوں کی سلیں توڑ کر دوبارہ قبضہ کر لیا ہے، جنرل بس اسٹینڈ انتظامیہ کی جانب سے دوبارہ سیل کرنے کی تیاریوں پر انجمن تاجران جنرل بس اسینڈ نے صدر ذوالفقار بابو کی زیر صدارت احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، مظاہرین نے انتظامیہ کو خبردار کیا کہ دوکانداروں کے خلاف یک طرفہ کاروائی سے گریز کیا جائے ورنہ جنرل بس اسٹینڈ بند کردیا جائے گا۔ جس کی تمام تر ذمہ داری انتظامیہ کی ہوگی۔ انجمن تاجران جنرل بس سٹینڈ نے میونسپل کارپوریشن کے ملازمین اور آفیسران کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرہ کی قیادت صدرذوالفقارباؤ اور جنرل سیکرٹرشیخ سلیم نیکی جبکہ مظاہرین نے بتایا ہے میونسپل کارپوریشن کے ملازمین آفیسران دکانوں سے منتھلی لینا افسران پولیس کیساتھ مل کرجھوٹے پرچے درج کروانے کی دھکمیاں دے رہیہیں اور کہا ہے کہ خاموشی سے دکان خالی کردوورنہ تمھاری دکانیں سیل کردیگے۔ مظاہر ین صدرانجمن تاجران نے مطالبہ کیا ہے کہ دکانداروں کو مالکانہ حقوق دے جائیں تاکہ اپنے خاندان کی کفالت کرسکے ورنہ میونسپل کاریویشن کے دفتر کا گھیراؤ اور روڈبلاک کرکیاحتجاج کریں گے

قبضہ

مزید : ملتان صفحہ آخر