کے پی حکومت کا بی آر ٹی منصوبے  کا فرانزک آڈٹ کرانے کا فیصلہ

کے پی حکومت کا بی آر ٹی منصوبے  کا فرانزک آڈٹ کرانے کا فیصلہ

  



پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) بس ریپڈ ٹرانزٹ (بی آر ٹی) منصوبہ میں سست روی اورناقص کارکردگی دکھانے پر صوبائی حکومت نے فرانزک آڈٹ کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ایڈیشنل چیف سیکریٹری  خیبرپختونخوا (کے پی) کی زیر صدارت اجلاس میں آڈٹ کا فیصلہ منصوبے میں تاخیر اور غیر تسلی بخش کام کی وجہ سے کیا گیا۔ کنٹریکٹر، کنسلٹنٹ، انجینئر اورپشاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (پی ڈی اے) میں  سے غلطی کس کی ہے اور ذمہ داروں کا تعین کرکے حکومت کو آگاہ کیا جائے گا۔اجلاس میں کنسلٹنٹ نے مؤقف اختیار کیا کہ ٹھیکیدار 6 ماہ کے لیے دیے گئے متفقہ اہداف حاصل نہیں کرسکا جب کہ ٹھیکیدار کنسلٹنٹ اور پی ڈی اے کے احکامات پر بھی عمل نہیں کررہا۔کنٹریکٹر کے مطابق کنسلٹنٹ وقت پر فیصلے کرتے ہیں نہ منظوری دیتے ہیں۔ ریچ 2 میں سائیکل ٹریک کی منظوری نہیں دی گئی، ریچ تھری میں 14 بس اسٹیشنوں پر اشاروں کی منظوری کا انتظار ہے جب کہ ادائیگیوں میں بھی تاخیر کی جا رہی ہے۔ 

فرانزک آڈٹ

مزید : صفحہ اول