بچوں کا عالمی دن‘ مختلف اداروں‘ سماجی تنظیموں کے زیر اہتمام تقریبات

بچوں کا عالمی دن‘ مختلف اداروں‘ سماجی تنظیموں کے زیر اہتمام تقریبات

  



ملتان (وقائع نگار‘ سٹی رپورٹر‘ سٹاف رپورٹر) بچوں کے عالمی دن یونیورسل چلڈرن ڈے کے موقع پر چائلڈ پروٹیکشن اینڈ ویلفیئر بیورو آفس میں چلڈرن فیسٹیول کا انعقاد کیا گیا۔یہ چلڈرن فیسٹیول کا انعقاد چائلڈ پروٹیکشن اینڈ ویلفیئر بیورو، ینگ پاکستانیز آرگنائزیشن اور تارے زمین پر ٹرسٹ کے اشتراک سے کیا گیا تھا۔جس کے مہمان خصوصی ایڈیشنل سیشن جج محمد نواز بھٹی تھے۔فیسٹیول (بقیہ نمبر13صفحہ12پر)

میں بچوں کے لئے کھانے پینے کے مختلف سٹالز لگائے گئے۔بچوں نے مختلف ٹیبلوز پیش کئے، بچوں کے لئے میوزک پروگرام اور میجک شو کا اہتمام کیا گیا۔آخر میں بچوں کے ساتھ یونیورسل چلڈرن ڈے کے حوالے سے کیک کاٹا گیا, پارلیمانی سیکرٹری برائے اطلاعات و ثقافت پنجاب محمد ندیم قریشی نے بچوں کے حقوق کے تحفظ کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ بچے ہمارا اثاثہ ہیں، ان کے حقوق کے تحفظ کے بغیر کوئی قوم اپنی روشن مستقبل کا خواب نہیں دیکھ سکتی، آج کے بچے کل کے معمار ہیں، ان کی اخلاقی و دینی تربیت ریاست کی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاشرے کا ہر فرد چائلڈ لیبر اور بچوں کی حق تلفی پر آواز بلند کرے، حکومت پنجاب بچوں کو ان کے حقوق دینے کے لئے عملی اقدامات پر عمل پیرا ہے۔ پوری قوم اس عالمی دن پر کشمیری بچوں کو حقوق کی فراہمی کا مطالبہ بھی کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ قوم کے نونہالوں کے حقوق کا تحفظ ہماری اجتماعی ذمہ داری ہے، صحیح خطوط پر تعلیم و تربیت سے بچوں میں خوداعتمادی پیدا ہوتی ہے۔ ہم نے پاکستان میں ان کو حقوق دینے کے لیے متحرک و کوشاں ہیں، ہم نے اپنے بچوں کو ایسا محفوظ ماحول دینا ہے جہاں ان کی ذہنی و جسمانی نشونما اچھے انداز میں ہو سکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ دین اسلام بچوں کے حقوق کے تحفظ کا عملی نمونہ پیش کیا گیا ہے جس پر ہمیں عمل کرنے کی ضرورت ہے۔ سماجی رہنما شاہد محمود انصاری نے کہا ہے کہ بچوں کا عالمی دن اس بات کا تقاضا کرتا ہے کہ معاشرے کو تشدد سے پاک بناکر بچوں کیلئے سازگار ماحول تشکیل دیا جائے، بچوں پر جسمانی و جنسی تشدد کسی صورت قبول نہیں، بچوں کے حقوق کے حوالے سے سختی سے عملدرآمد سے ہی بچوں کے حقوق کی پامالی کو روکا جاسکتا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے شعور ترقیاتی تنظیم و شمع بناسپتی اور ویز واش کے اشتراک سے بچوں کے عالمی دن کے موقع پر حقوق اطفال آگاہی واک کی قیادت کرتے ہوئے کیا۔ شاہد محمود انصاری نے مزید کہا کہ بچوں کے عالمی دن منانے کے مقاصد تو بہت ہیں لیکن بچوں کی فلاح و بہبود کے حوالے سے شعور اجاگر کرنا بے گھر بچوں کو بھی دیگر بچوں جیسی آسائشیں مہیا کرنا اولین ترجیح ہونا چاہئے۔ تعلیم، صحت، تفریح اور ذہنی تربیت کے حوالے سے شعور اجاگر کرکے ہم معاشرے کو بچوں کیلئے فرینڈلی بناسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بچوں پر جنسی و جسمانی تشدد لمحہ فکریہ سے کم نہیں، بچے معصوم کلی کی حیثیت رکھتے ہیں لیکن معاشرے میں جہالت، کم علمی، فرسودہ رسم و رواج نے بچوں کی ترقی کی راہیں محدود کرکے رکھ دی ہیں، معصوم بچوں سے مشقت کی حوصلہ شکنی کرنا، تعلیمی اداروں میں بچوں پر تشدد کا خاتمہ اور سخت سزائیں روکنے کیلئے ضروری ہے کہ قوانین کو متحرک کرکے ذمہ دار ادارے اپنا فریضہ ادا کریں چونکہ بچے ہی ہمارا سرمایہ افتخار اور قوم کا روشن مستقبل ہیں۔ بچوں کے عالمی دن کے حوالے سے ڈسٹر کٹ ایجو کیشن اٹھارٹی ملتان کی زیر نگرانی تحصیل سٹی ملتان کے زیر اہتمام گورنمنٹ ایلمنیٹری ماڈل سکول نمبر1نیو ملتان سے گلشن مارکیٹ تک ”تعلیم سب کے لئے“ ریلی کا انعقاد کیا گیا۔ ریلی کی قیادت ڈپٹی ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر تحصیل صدر ملتان اسلم خان قیصرانی،،اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسر مرکزایسٹ ایوب علی صدیقی اور سینئرسماجی راہنماوماہر تعلیم میاں نعیم ارشدنے کی۔ریلی کے شرکاء نے بینر اور پلے کارڈ اُٹھارکھے تھے جن پر بچوں کے حقوق کے حوالے سے مختلف نعرے درج تھے ریلی کے اختتام پر مہمان خصوصی اسلم خان قیصرانی نے کہا حکومت معیار تعلیم میں بہتری اور شرح خواند گی میں اضا فہ کے لیے عملی اقدامات کر رہی ہے سرکاری سکو لوں کا معیار بہتر بنانے کے لیے کوالٹی ایجو کشن پر خصوصی تو جہ دی جا رہی ہے۔سینئر سماجی راہنما و ماہر تعلیم میاں نعیم ارشد نے کہا کہ تعلیم کے بغیر چائلڈ لیبر کا خاتمہ ممکن نہیں۔ اُنہوں نے مطا لبہ کیا کہ بچوں کے حقوق کے تحفظ کے لئے قوانین پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے تا کہ بچوں کے مستقبل کو بہتر بنایا جا سکے۔اس موقع پر ظفر علی،چوہدری رضوان اسلم،راؤانور علی،رانا زبیر،ذکیہ مقبول،نویدہ کوثر،بے بی رخسانہ،یاسر نون،محمد کامران،محمد دلدار،صفدر شیر،اور افتخار سمیت بچوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔

تقریبات

مزید : ملتان صفحہ آخر