قانون بااثر افراد نہیں صرف غریبوں کیلئے رہ گیا،لاہور ہائیکورٹ

قانون بااثر افراد نہیں صرف غریبوں کیلئے رہ گیا،لاہور ہائیکورٹ

  



 لاہور (نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے قراردیا ہے کہ قانون بااثر افراد کے لئے نہیں صرف غریبوں کے لئے رہ گیا ہے،اس ملک میں غریب کی حالت مزید خراب ہو چکی ہے، مسٹر جسٹس محمد قاسم خان نے یہ ریمارکس اقدام ڈکیتی اورپولیس مقابلے کے مقدمہ کے ملزموں کی درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے دیئے۔ ملزمان شوکت اور آصف کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ پولیس ناکے پر رکنے پر تاخیر پر ان پر فائرنگ کی گئی اور انہیں پکڑ کرڈکیتی کے الزام میں مقدمہ درج کرلیا گیا،ان پر پولیس مقابلے کا الزام بھی لگایاگیا،فاضل جج نے گوجرانوالہ پولیس کی طرف سے درج اس مقدمہ کاریکارڈ اورمیڈیکل رپورٹس دیکھنے کے بعد نقائص کے حوالے سے متعلقہ حکام سے وضاحت طلب کی،عدالت نے سیکرٹری صحت کیپٹن ریٹائرڈ محمد عثمان کو بھی طلب کیاجو کہ پیش ہوئے،متعلقہ حکام عدالت کو مطمئن نہ کرسکے،فاضل جج نے ریمارکس دیئے کہ پولیس اہلکاروں نے پراڈو والے پر فائرنگ کی ہوتی تو اب تک تمام پولیس والے جیل میں ہوتے،موٹر سائیکل سوار کو ناکے پر روک کر گولیاں ماردیں اور پولیس مقابلہ قرار دے دیا،پہلے شہریوں پر گولیاں چلاکر پولیس مقابلہ کا ڈرامہ رچایا پھر انہیں مزید مقدموں میں نامزد کردیا، بادی النظر میں یہ پولیس مقابلہ جعلی ہے۔

بااثر افراد

مزید : صفحہ آخر