بچوں کی حالت بہتر بنانے کیلئے حکومت کیساتھ ساتھ سماجی تنظیمیں بھی کردار ادا کریں‘ علی ترین

بچوں کی حالت بہتر بنانے کیلئے حکومت کیساتھ ساتھ سماجی تنظیمیں بھی کردار ...

  



لودھراں ( نما ئند ہ پا کستا ن) سماجی تنظیم ایل پی پی کے صدر علی ترین نے بچوں کے عالمی دن کے حوالے سے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ (بقیہ نمبر41صفحہ12پر)

بچے ہمارے معاشرے کا معصوم طبقہ ہیں،انکی حفاظت،پرورش، اعلیٰ اخلاقی تربیت اور بہترین تعلیمی سہولیات کی فراہمی ہمارے اہم ترین فرائض میں شامل ہے۔معاشرے میں بچوں کے حقوق کی طرف توجہ دلانا اور شعورو آگہی بہت ضروری ہے۔علی ترین نے کہا کہ پاکستان میں بچوں کی حالت زار بہتر بنانے کے لئے حکومت کے ساتھ ساتھ سماجی تنظیموں کو بھی کام کرنے کی ضرورت ہے۔ اس حوالے سے لودھراں پائلٹ پراجیکٹ بچوں کے حقوق کی فراہمی میں بھرپور کردار ادا کررہاہے۔ ایل پی پی کے چیف ایگزیکٹیو آفسیر ڈاکٹر عبدالصبور نے کہا کہ پاکستان میں ایک سال کی عمر تک بچوں کی شرح اموات ہر ایک ہزار میں سے 61 نوزائدہ بچے ہیں جبکہ پانچ سال سے کم عمر تک یہ شر ح ہر 1000 میں سے 75 بچے ہے۔ پاکستان میں 33فیصد بچے مطلوبہ وزن سے کم پیدار ہورہے ہیں جبکہ 44فیصد بچے سٹنٹڈ گرووتھ کا شکار ہیں۔ایک محتاط اندازے کے مطابق 2 کروڑ بچے اسکول نہیں جاتے۔پاکستان میں روزانہ بچوں سے زیادتی کے ایوریج 12 کیس رپورٹ ہوتے ہیں۔اگر چلڈ لیبر کی بات کی جائے تو پاکستان میں ڈیڑھ کروڑ بچے چائلڈ لیبر کا شکار ہیں۔پاکستان کم عمری کی شادی مین دُنیا میں چھٹے نمبر ہے۔ ڈاکٹر عبدالصبور نے کہا کہ بچوں کو حقوق کی فراہمی کے لئے ہم سب کو ملکر اپنا کردار ادا کرناہوگا حکومت اکیلے یہ کا م نہیں کرسکتی اس سلسلے میں شہریوں کے ساتھ ساتھ عالمی اداروں،انسانی حقوق کی تنظیموں اور سماجی تنظیموں کو اپنا بھرپور کردار ادا کرنا ہوگا۔ڈاکٹر عبدالصبور نے کہا کہ ایل پی پی نے اب تک اپنے پروگرامز کے ذریعے چار لاکھ 74 ہزار292بچوں کو سپورٹ کیا ہے اور مستقبل میں بھی اس طرح کے پروگرامز جاری رکھے جائیں گے

علی ترین

مزید : ملتان صفحہ آخر