سرائے نورنگ،ایمرجنسی میں عملہ کا بدتمیزی پر احتجاجی مظاہرہ

سرائے نورنگ،ایمرجنسی میں عملہ کا بدتمیزی پر احتجاجی مظاہرہ

  



سرائے نورنگ(نمائندہ پاکستان)گذشتہ شب ایک شخص کی جانب سے مبینہ طورپرٹی ایچ کیوہسپتال نورنگ کے ایمرجنسی میں تعینات عملے سے بدتمیزی کے خلاف ہسپتال عملے نے احتجاج کیاڈاکٹرعبدالغفار وزیراورایس ایچ اونورنگ وحیدنورخان نے عملے سے کامیاب مذاکرات کرکے احتجاج ختم کیا جس کی قیادت ہسپتال ایم ایس ڈاکٹراخترزمان،پیرامیڈیکل ایسوسی ایشن کے صدرکلیم اللہ اورنصیب خٹک نے کی جہاں پرہسپتال عملے نے تمام سروسزکومعطل کرکے ہسپتال کے مین گیٹ کوبندکردیا ہسپتال کے ایم ایس ڈاکٹراخترزمان،پیرامیڈیکل ایسوسی ایشن کے صدرکلیم اللہ اورنصیب خٹک کاکہناتھاکہ گذشتہ شب مبینہ طورپرایک شخص ہسپتال کے شعبہ ایمرجنسی میں اپنے بیٹے کوعلاج معالجے کے لئے لایاجہاں پرمذکورہ شخص نے ایمرجنسی میں تعینات عملے سے استفسارکیاکہ گذشتہ روز رات کوہسپتال میں ایک ڈاکٹرنے اُن کے بیٹے کے لئے دوائی دی ہے تاہم بیٹاابھی صحت یاب نہیں ہوا اُنہوں نے عملے سے کہاکہ وہ ڈاکٹرمجھے بتاؤں عملے نے کہاکہ و ہ ڈاکٹرہمیں معلوم نہیں ہے جس پراس شخص نے عملے سے مبینہ طورپربدتمیزی کی مظاہرین کاکہناتھاکہ آئے روزعملے کے ساتھ ایسے واقعے رونماہورہے ہیں اُنہوں نے انتظامیہ سے مطالبہ کیاکہ تحصیل ہیڈکوارٹرہسپتال نورنگ کے لئے پولیس گرت دی دی جائے تاکہ آئندہ ایسے واقعات رونمانہ ہوسکے،بعدازاں ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرلکی مروت کی ہدایت پرایم ایس سٹی ہسپتال ڈاکٹرعبدالغفاروزیر،ایس ایچ اوتھانہ نورنگ وحیدنورخان،قومی وطن پارٹی کے ضلعی صدرامیرزادہ خٹک،تحریک انصاف کے رہنماملک داؤدخان اورغلام دریدہسپتال پہنچ کر عملے سے کامیاب مذاکرات کی اور ایس ایچ اونورنگ نے موقع پرپولیس گرت ہسپتال میں تعینات کردیااورعملے نے بھی احتجاج کوختم کرکے ہسپتال کے تمام سروسزکومریضوں کے لئے کھول دیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر