کوہاٹ میں منشیات کی بھاری کھیپ نذر آتش کرکے تلف کرلی گئی

  کوہاٹ میں منشیات کی بھاری کھیپ نذر آتش کرکے تلف کرلی گئی

  



کوھاٹ (بیورو رپورٹ) کوہاٹ میں منشیات کی بھاری کھیپ نذر آتش کرکے تلف کرلی گئی ہے۔تلف کئے جانیوالے نشہ آور اشیاء میں چرس،ہیروئن،افیون اور شراب کی بھاری کھیپ شامل ہے۔منشیات تلف کرنے کی کاروائی جوڈیشل مجسٹریٹ ون کوہاٹ محمد ریحان صمد اور ایس ایچ او جرما قسمت خان کی نگرانی میں عمل میں لائی گئی۔نذر آتش کئے گئے منشیات سال 2010سے لیکرسال رواں تک تھانہ جرما میں مختلف اوقات میں درج منشیات کے فیصلہ شدہ کیسوں کا مال مقدمہ تھا۔پولیس ذرائع کے مطابق جوڈیشل مجسٹریٹ ون محمد ریحان صمد نے تھانہ جرما کے نو سالہ ریکارڈ پر مبنی منشیات کے فیصلہ شدہ مقدمات کا مال مقدمہ نذر آتش کرکے تلف کرلیا ہے۔اس موقع پر ایس ایچ او تھانہ جرما قسمت خان،انوسٹی گیشن آفیسر سدا خان،محرر تھانہ جرما گلاب علی اور دیگر متعلقہ پولیس افسران بھی انکے ہمراہ موجود تھے۔ نذر آتش کی گئی منشیات تھانہ جرما پولیس کی طرف سے مختلف اوقات میں کریک ڈاؤن اور چیکنگ کی کاروائیوں کے دوران پکڑی گئی تھی جنکے مقدمات مقامی عدالتوں میں کامیابی سے ہمکنار کئے گئے اور منشیات فروشی و سمگلنگ میں ملوث مجرمان کو انکے مکروہ اعمال کی سزائیں دلائی گئی جبکہ پولیس نے مقامی عدالت سے پکڑی گئی ان منشیات کو تلف کرنے کی استدعا کے بعد فیصلہ شدہ مقدمات کا مال مقدمہ جس میں 280کلوگرام چرس،6کلوگرام افیون،4کلوگرام ہیروئن اور درجنوں بوتل شراب شامل ہیں باقاعدہ طور پر نذر آتش کرکے تلف کرلئے ہیں۔پولیس ذرائع کے بقول ڈی پی او کوہاٹ کیپٹن(ر)واحد محمود کی منشیات کے خلاف وضع کردہ حکمت عملی کے تحت مقامی پولیس نے سال رواں متعدد مرتبہ منشیات سمگل کرنے کی کوشش ناکام بناتے ہوئے بین الصوبائی منشیات سمگلر نیٹ ورک میں شامل کئی سمگلروں کو بھی گرفتار کیا اور منشیات کے متعدد مقدمات عدالتوں میں کامیابی سے ہمکنار کئے گئے اور قبل ازیں بھی منشیات نذر آتش کرنے کی کئی کاروائیاں عمل میں لائی گئی ہیں جس پر شہریوں نے پولیس اورمقامی عدلیہ کے کردار کو زبردست الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر