انجمن تاجران ملاکنڈ کی 2023 سے قبل ٹیکس نفاد کیخلاف احتجاج کی دھمکی

  انجمن تاجران ملاکنڈ کی 2023 سے قبل ٹیکس نفاد کیخلاف احتجاج کی دھمکی

  



بٹ خیلہ(بیورورپورٹ) انجمن تاجران مالاکنڈڈویژن کے صدرحاجی شاکراللہ خان نے دھمکی دی ہے کہ اگرموجودہ حکومت نے سال2023سے قبل مالاکنڈڈویژن میں ٹیکس کے نفاذ کی کوشش کی توہم اس کے خلاف بھرپورمہم چلائیں گے اورشٹرڈاؤن ہڑتال کرکے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے مالاکنڈلیویز کے اہلکاربٹ خیلہ بازارمیں بلاجوازگاڑیوں کوچالان کرنے کاسلسلہ فی الفوربندکیاجائے جب تک ہمارے تاجربرادری کوپرائس کمیٹی کے ریٹ مقررکرنے میں اعتماد میں نہیں لیاگیااس وقت تک ہم حکومتی نرخ نامہ کومستردکردیں گے ڈپٹی کمشنر مالاکنڈتاجروں کواعتماد میں لیکرنرخ نامہ جاری کیاجائے تاکہ تاجربرادری اورحکومت دونوں کومشکلات کاسامنا نہ ہوان خیالات کااظہارحاجی شاکراللہ خان نے گل عظیم پلازہ بٹ خیلہ میں ایک بڑے ا جتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب سے جنرل سیکرٹری ملک دلنوازخان اوردیگرمشران نے بھی خطاب کیا۔انہوں نے کہاکہ ہم کسی بھی سیاسی پارٹی یاحکومت کے خلاف نہیں ہے مگرتاجربرادری کوتنگ کرنے سے گریز کیاجائے انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کے سابقہ وزیراعلیٰ پرویزخٹک نے سال 2023تک مالاکنڈڈویژن کوہرقسم ٹریفک سے مستثنیٰ قراردیاہے مگراب مالاکنڈمیں مختلف ادارے عوام کوتنگ کرنے کیلئے ٹیکس لاگوکررہے ہیں جوہم کسی بھی صورت میں قبول نہیں کریں گے۔انہوں نے کہاکہ حکومت سے اپیل کرتے ہیں کہ اپنے فیصلوں پرنظرثانی کرکے سال 2023تک اپنے وعدوں کوعملی جامہ پہنائیں اورمالاکنڈڈویژن کے غریب عوام اورتاجربرادری کواحتجاج کرنے پرمجبورنہ کیاجائے انہوں نے دھمکی دی ہے کہ اگرحکومت نے اپنافیصلہ واپس نہ لیاگیاتوہم پورے مالاکنڈڈویژن کے کوکال دیکرشٹرڈاؤن ہڑتال کرکے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر