والدین پولیو قطروں کیخلاف افوا ہوں پر کان نہ دھریں، مومنہ باسط

والدین پولیو قطروں کیخلاف افوا ہوں پر کان نہ دھریں، مومنہ باسط

  



ایبٹ آباد(ڈسٹرکٹ رپورٹر) رکن خیبرپختونخوا اسمبلی مومنہ باسط نے پانچ سال تک کی عمر کے بچوں کے والدین پر زور دیا ہے کہ وہ پولیو کے قطروں سے متعلق افواہوں پر کان نہ دھریں اور بچوں کے مفاد میں انہیں پولیو کے قطرے ضرور پلوائیں تاکہ انہیں زندگی میں معذوری سے محفوظ رکھا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہم بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے نہیں پلائیں گے تو ان سے بہت بڑی زیادتی کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز وومن اینڈ چلڈرن ہسپتال ایبٹ آباد میں بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کے بعد ان کے والدین سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ایبٹ آباد محمدشہاب، ڈسٹرکٹ و اسسٹنٹ ہیلتھ آفیسر،ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر ماروی ملک شیر، ای پی آئی انچارج،ڈبلیوایچ او کے نمائندے اور والدین کی کثیر تعداد بھی اس موقع پر موجود تھی۔ مومنہ باسط نے کہا کہ موجودہ حکومت بچوں کے تحفظ کے حوالے سے اپنی ذمہ داریوں کو محسوس کرتے ہوئے پولیو کے خاتمے کے لیے پوری طرح سنجیدہ ہے اور اس کے لیے تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لا رہی ہے۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس مہلک بیماری کے خاتمے کے لیے والدین کا تعاون انتہائی ناگزیر ہے۔ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر منہاج نے اس موقع پر رواں پولیو مہم کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ 22نومبر تک جاری رہنے والی رواں مہم کے دوران ضلع ایبٹ آباد میں دو لاکھ 22 ہزار بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ہدف مقرر کیا گیا ہے جس کے لیے 790 موبائل ٹیمیں مقرر کرنے کے علاوہ 34 ٹرانسپورٹ اڈوں پر مراکز قائم کئے گئے ہیں۔ ان ٹیموں کو مانیٹر کرنے کے لیے ضلعی انتظامیہ کے افسران اور محکمہ صحت کے ڈاکٹروں کو تعینات کیا گیا ہے جبکہ پولیو ٹیموں کی دن بھر کی کارکردگی اور مشکلات وغیرہ کا جائزہ لینے کے لیے مہم کے دوران ہر روز شام کو ڈپٹی کمشنر کی صدارت میں اجلاس بھی منعقد کیا جاتا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر