کورنگی انڈسٹریل ایریا میں 12 میگا واٹ گرڈ سسٹم کا افتتاح

  کورنگی انڈسٹریل ایریا میں 12 میگا واٹ گرڈ سسٹم کا افتتاح

  



کراچی (پ ر) کے الیکٹرک نے کورنگی انڈسٹریل ایریا میں گیٹز فارما کے نئے پیداواری پلانٹ کی بجلی کی ضروریات پورا کرنے کیلئے نئے گرڈ اور 132kV ڈسٹری بیوشن سسٹم کو بجلی کی فراہمی کا آغاز کرد یا ہے۔۔ اس حوالے سے ہونے والی ایک خصوصی تقریب میں گیٹز فارما کے مینیجنگ ڈائریکٹر اور سی ای او خالد محمود اور کے الیکٹرک کے سی ای او مونس علوی سمیت دونوں اداروں کے اعلیٰ افسران نے شرکت کی۔ کے الیکٹرک کے سی ای اور مونس علوی نے کہا کہ کے الیکٹرک صنعتی ترقی کو یقینی بنانے کیلئے بجلی کی بڑھتی ہوئی طلب کو پورا کرنے کیلئے پر عزم ہے،آج اس گرڈ کے ذریعے گیٹز فارما کے نئے پلانٹ پر بجلی کی فراہمی کا آغاز ہماری اس عزم کی ترجمانی کرتا ہے۔ کراچی میں بجلی کی تیزی سے بڑھتی ہوئی طلب کو پورا کرنے کیلئے، کے الیکٹرک متعدد ترقیاتی منصوبوں پر کام کر رہا ہے۔اگلے چند برسوں میں کے الیکٹرک پاور ویلیو چین میں 3ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کرنے کا ارادہ رکھتی ہے جس میں RLNG پر مبنی 900 میگا واٹ کا بن قاسم پاور اسٹیشن III اور کوئلے سے چلنے والا 700 میگا واٹIPP کے علاوہ، ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن کے متعدد بڑے منصوبے شامل ہیں۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے گیٹز فارما کے منیجنگ ڈائریکٹر خالد محمود نے کہا کہ یہ گرڈ اسٹیشن ہمارے ادارے کے نئے پلانٹ - اسٹولا(Astola) کی بجلی کی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے ضروری ہے۔یہ پلانٹ پاکستان میں ادویات تیار کرنے والا سب سے بڑا پلانٹ ہے۔اس پلانٹ کو عالمی ادارہ صحت کی منظوری اور لیڈرشپ ان انرجی اینڈ انوائرمنٹل ڈیزائن (LEED)کی گولڈ سرٹیفکیشن حاصل کرنے کیلئے درکار اصولوں کے مطابق ڈیزائن کیا گیا ہے۔ گیٹز فارما کو پاکستان کے سب سے بڑے فارماسیوٹیکل ایکسپورٹر کی حیثیت برقرار رکھنے میں یہ پلانٹ بہت اہم کردار ادا کرے گا،جہاں تحقیق اور تجدید کے ذریعے بے مثال کارکردگی کو یقینی بنایا جائے گا۔ گرڈ اسٹیشن پر ترقیاتی کام کے الیکٹرک کے قریبی تعاون سے چوبیس گھنٹے جاری رکھا گیا۔اس منصوبے کی بروقت تکمیل میں کے الیکٹرک کی معاونت اور تکنیکی مہارت قابل تعریف ہے۔کے الیکٹرک کی جانب سے صنعتی صارفین کی سہولت کیلئے متعدد اقدامات اٹھائے گئے ہیں جس میں بجلی کے نئے کنکشن کی تیز تر فراہمی، آن لائن فارم جمع کرنے کی سہولت، درکار دستاویزات میں کمی، نئے کنکشن کی ادائیگی کیلئے ای پیمنٹ کی سہولت، اخراجات کا آن لائن تخمینہ اور آن لائن کیس ٹریکنگ جیسی سہولیات شامل ہیں۔واضح رہے کہ ان اقدامات نے عالمی " ایز آف ڈوئنگ بزنس" (EoDB) انڈیکس میں پاکستان کی رینکنگ بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ بجلی کے حصول کیلئے مقررہ پیرامیٹرز کے اعتبار سے بھی پاکستان کی پوزیشن میں بہتر ی آئی ہے جو کہ 167سے بہتر ہو کر 123 ہو گئی ہے جبکہ ایز آف ڈوئنگ بزنس انڈیکس میں دی گئی گزشتہ سال کی رینکنگ کے مقابلے میں مجموعی طور پر 28درجہ بہتری آئی ہے جو144سے بہتر ہو کر 108 ہو گئی ہے۔

مزید : صفحہ آخر