آپ کا اینڈرائیڈ سمارٹ فون جاسوسی کا آلہ، ایسی خبر کہ جان کر آپ اپنا فون پاس رکھنے سے ہی گھبرانے لگ جائیں

آپ کا اینڈرائیڈ سمارٹ فون جاسوسی کا آلہ، ایسی خبر کہ جان کر آپ اپنا فون پاس ...
آپ کا اینڈرائیڈ سمارٹ فون جاسوسی کا آلہ، ایسی خبر کہ جان کر آپ اپنا فون پاس رکھنے سے ہی گھبرانے لگ جائیں

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) سائبر سکیورٹی ماہرین نے اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم میں ایک ایسی خامی تلاش کر لی ہیں کہ سن کر اینڈرائیڈ فون استعمال کرنے والے خوفزدہ رہ جائیں گے۔ میل آن لائن کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ اینڈرائیڈ میں ایک ایسی خامی موجود ہے جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ہیکرز کسی بھی اینڈرائیڈ فون کو ہیک کر سکتے ہیں۔ وہ اس کے کیمرے اور مائیک کے ذریعے ویڈیوز اور آڈیوز اور کالز ریکارڈ کر سکتے ہیں اور فون کے جی پی ایس کے ذریعے صارفین کی لوکیشن کے بارے میں معلوم کر سکتے ہیں۔

یہ انکشاف سائبر سکیورٹی فرم چیک مارکس کے ماہرین نے کیا ہے۔ انہوں نے اس خامی کو ”CVE-2019-2234“ کا نام دیا ہے۔ ماہرین نے اینڈرائیڈ کی سکیورٹی کو پرکھنے کے لیے ایک ایسی ایپلی کیشن بنائی جو فون کو ہیک کرکے اس کی معلومات تک رسائی حاصل کر سکتی تھی۔ اس ایپلی کیشن کا گوگل کے بنائے ہوئے پگزل فون کے دو ماڈلزپگزل 2ایکس ایل اور پگزل 3 پر تجربہ کیا گیا۔ ان ماڈلز میں جب اس ایپلی کیشن کو انسٹال کیا گیا تو اس نے گوگل کا سکیورٹی نظام توڑ ڈالا اور صارف کی اجازت کے بغیر اس کے نہ صرف نجی ڈیٹا تک رسائی حاصل کر لی بلکہ مائیک، کیمرے اور جی پی ایس کو بھی اپنے کنٹرول میں لے لیا۔گوگل کی طرف سے چیک مارکس کے اس تجربے پر ردعمل میں کہا گیا ہے کہ ”ہم چیک مارکس کی تعریف کرتے ہیں کہ انہوں نے اس خامی کی نشاندہی کی۔ ان کی تحقیق کو مدنظر رکھتے ہوئے ہم نے اس خامی کو دور کر دیا ہے۔ یہ دراصل گوگل کیمرا ایپلی کیشن میں خامی تھی، جس کی نئی اپ ڈیٹ میں اس کو دور کر دیا گیا ہے اور صارفین گوگل کیمرا ایپلی کیشن کو اپ ڈیٹ کرکے ہیکنگ کے خطرے سے بچ سکتے ہیں۔“

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی