ساری اپوزیشن جیلوں میں ڈال کر بھی پرفارمنس زیرو ہے، اللہ کی عدالت کا فیصلہ آنے والا ہے: حمزہ شہباز

ساری اپوزیشن جیلوں میں ڈال کر بھی پرفارمنس زیرو ہے، اللہ کی عدالت کا فیصلہ ...
ساری اپوزیشن جیلوں میں ڈال کر بھی پرفارمنس زیرو ہے، اللہ کی عدالت کا فیصلہ آنے والا ہے: حمزہ شہباز

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہبازشریف نے کہا ہے کہ آپ نے اپوزیشن کے تمام لوگوں کو جیل میں بند کردیا مگر پرفارمنس زیرو ہے،جھوٹ کا ٹائی ٹینک زمین بوس ہونے والا ہے،ان مشکل حاات کے باوجود اپوزیشن نے اپنا آئینی رول ادا کیا ہے،اپوزیشن نے پہلے دن کہا تھا میثاق معیشت کرو مگر مذاق اڑایا گیا، میں چیف جسٹس کی بات پر تبصرہ نہیں کروں گا مگر اداروں پر بات نہیں ڈالنی چاہیے،اللہ کی عدالت کا فیصلہ آنے والا ہے تھوڑا انتظار کریں۔ پاکستانی قوم کا شکریہ ادا کرتا ہوں جنکی دعاؤں سے میاں نواز شریف کا علاج جاری ہے،14 ماہ ہو گئے ہیں میری ایک ہی بات ہے اگر یہ حکومت ن لیگ کی نسبت 25 فی صد بھی پرفارم کر جائے تو شاباش دوں گا،آج بھٹے کے مزدور,  ڈیلی ویجز ملازمین, سفید پوش طبقہ اور تاجر برادری معیشت کا رونا رو رہے ہیں،14 ماہ میں سبزیاں, پھل, ادویات کی قیمت 6 گنا بڑھ چکی ہے، پاکستانیوں کو تشویش ہے کہ اگر حکومت کی کارکردگی اسی طرح جاری رہی تو ہم مزید سیاسی گرداب میں پھنس جائیں گے۔

 پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حمزہ شہباز نے کہا کہ جو توقعات اور سبز باغ دکھائے گئے وہ بجلی ا ور گیس کے بلوں کی صورت میں بم بن کر برسے ہیں،ہر چیز کا منطقی انجام ہوتا ہے لیکن ان سے مہنگائی کنٹرول نہیں ہورہی،انہیں ٹماٹر کے ریٹ کا نہیں پتا, عوام سے پوچھیں ٹماٹر کی قیمت کیا ہے؟

انہوں نے کہا کہ رہبر کمیٹی مل کر اس معاشی بدحالی کا کوئی حل نکالے گی،پی ٹی آئی سی پیک کی مخالفت کرتی تھی اور آج نواز شریف کے منصوبوں پر تختیاں لگاتی ہے،ہم نے ڈینگی کنٹرول کیا مگر اب صورتحال مختلف ہے،ربیع الاول کا مہینہ ہے،کیا ریاست مدینہ میں غریب بھوکا مرتا تھا؟ بنی گالا کے محل غریبوں کا مذاق اڑاتے ہیں۔

حمزہ شہباز کا کہنا تھا کہ آپ نے اپوزیشن کے تمام لوگوں کو جیل میں بند کردیا مگر پرفارمنس زیرو ہے،جھوٹ کا ٹائی ٹینک زمین بوس ہونے والا ہے،ان مشکل حاات کے باوجود اپوزیشن نے اپنا آئینی رول ادا کیا ہے،اپوزیشن نے پہلے دن کہا تھا میثاق معیشت کرو مگر مذاق اڑایا گیا۔

انہوں نے کہا کہ میں چیف جسٹس کی بات پر تبصرہ نہیں کروں گا مگر اداروں پر بات نہیں ڈالنی چاہیے،اللہ کی عدالت کا فیصلہ آنے والا ہے تھوڑا انتظار کریں۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور