مسلم لیگ (ن) کا حکومتی پابندیوں کے باوجود سیاسی محاذ گرم رکھنے کا فیصلہ

مسلم لیگ (ن) کا حکومتی پابندیوں کے باوجود سیاسی محاذ گرم رکھنے کا فیصلہ

  

 لاہور(جنرل رپورٹر،نیوزایجنسیاں)حکومتی پابندیوں کے باوجود مسلم لیگ (ن)نے سیاسی محاذ گرم رکھنے کا فیصلہ کیاہے۔ مریم نواز حکومت مخالف تحریک کی کامیابی کیلئے سرگرم ہیں اور انہوں نے گزشتہ روز پارٹی سیکرٹریٹ ماڈل ٹاؤن میں پنجاب کے مختلف اضلاع میں جلسوں کی حکمت عملی طے کرنے کیلئے کئی ایک اجلاسوں سے خطاب کیا ہے۔ پارٹی ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ن) نے 26 نومبر کو ضلع اوکاڑہ کے علاقے دیپالپور میں جلسہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس میں مریم نواز بھی شرکت کریں گی۔ مریم نواز نے جمعہ کے روز ماڈل ٹاون میں پہلے اجلاس کے دوران دیپالپور جلسے کے حوالے سے اہم مشاورت کی، جبکہ دوسرے اجلاس میں مریم نواز ملتان نے جلسے کے حوالے سے مختلف اضلاع کی قیادت سے ملاقاتیں بھی کی۔پارٹی ذرائع کے مطابق ملتان، لاہور اور دیپالپور جلسوں کو کامیاب کرنے کیلئے مریم نواز خود معاملات دیکھ رہی ہیں اور وہ 22 نومبر کو پشاور میں ہونے والے پی ڈی ایم کے جلسے میں بھی شرکت کریں گی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اجلاس میں اس بات پر بھی اتفاق کیا گیا کے حکومت نے کرونا وائرس کے نام پر جو جلسوں جلوسوں اور عوامی اجتماعات پر پابندی عائد کی ہے اس کو خاطر میں نہیں لایا جائے گا ہر جلسے میں مسلم لیگ نون شرکاء کوداخلی گیٹوں پر ماسک دے گی اور ہر طرح کے ایس او پیز  پر عملدرآمد کروایا جائے گا اور احتجاجی تحریک جاری رکھے جائیں گے،دوسری جانب پنجاب کے تنظیمی اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے سیکریٹری جنرل احسن اقبال نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) پاکستان کی ترقی کی علامت ہے،سلیکٹڈ حکومت نے ملک کو اندھیروں میں دھکیل دیا ہے،پی ڈی ایم کی تحریک ہر پاکستانی کی آواز ہے۔اجلاس میں پنجاب کے صدر رانا ثنا اللہ خان، جنرل سیکرٹری اویس لغاری سمیت دیگر نے بھی شرکت کی۔ سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے پنجاب کے عہدیداروں میں نوٹیفکیشن بھی تقسیم کئے۔احسن اقبال پنجاب کی تنظیم سازی مکمل ہونے پر پنجاب کے عہدیداروں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی سب سے بڑی جماعت کا تنظیمی طور پر فعال ہونا سیاست اور پارٹی کے لئے ایک سنگ میل ثابت ہوگا۔ کارکن ہمارا اثاثہ ہیں اور انہیں ہر سطح پر عزت و احترام دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) پاکستان کی ترقی کی علامت ہے،سلیکٹڈ حکومت نے ملک کو اندھیروں میں دھکیل دیا ہے۔ رانا ثنا اللہ خان نے کہا کہ تنظیم سازی کا فریضہ مکمل ہونے پر اطمینان ملا ہے،تمام عہدیدار اور کارکنوں کو مبارکباد پیش کرتے ہیں،تنظیمی ڈھانچہ ووٹ کو عزت دو کی تحریک میں ہراول دستہ ثابت ہوگا۔اجلاس میں چار قراردادیں بھی منظور کی گئیں۔ 

مسلم لیگ (ن) 

مزید :

صفحہ اول -