ناکام حکومتی پالیسیوں سے نوجوانوں کا  مستقبل تاریک، سید ذیشان اختر کا ردعمل

  ناکام حکومتی پالیسیوں سے نوجوانوں کا  مستقبل تاریک، سید ذیشان اختر کا ...

  

بہاولپور (ڈسٹرکٹ رپورٹر)نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی (بقیہ نمبر40صفحہ6پر)

پنجاب سید ذیشان اختر نے کہا ہے کہ  ملک کی اقتصادی تباہی کا اصل ذمہ دار حکمران ٹولہ ہے جنہوں نے سودی قرضے لیکر ملک کو دلدل میں دھکیل دیا ہے۔مہنگائی بے روزگاری اور بدامنی کی وجہ سے عوام مایوسی اور بے چینی کا شکار ہیں۔کل ملکی پیداوار کا چالیس فیصد قرضوں کے سود کی ادائیگی میں چلاجاتا ہے،حکومتی گاڑی کا پہیہ چلانے کے بعد ترقیاتی کاموں اور عوام کو تعلیم و صحت کی سہولتیں دینے کیلئے خزانے میں کچھ نہیں بچتا۔عام آدمی بری طرح پس چکا ہے،لاکھوں نوجوان بے روز گاری کے ہاتھوں تنگ ہیں اورحکومتوں کی عدم توجہ اور ناکام پالیسیوں کی وجہ سے نوجوانوں کا مستقبل تاریک ہوچکا ہے۔انہوں نے کہا کہ انتخابی نظام سے عوام کا اعتماد اٹھ چکا ہے۔جاگیر داروں اور سرمایہ داروں نے دولت کے بل بوتے پر انتخابی نظام اور پولینگ اسٹیشن کو یرغمال بنارکھا ہے۔عام سیاسی کارکن الیکشن میں کروڑوں اربوں خرچ کرنے والوں کا مقابلہ کرنے کا تصور نہیں کرسکتا۔ جب تک انتخابات دولت کا کھیل بنے رہیں گے تبدیلی کا تصور نہیں کیا جاسکتا۔الیکشن کمیشن اپنے قوانین پر عمل درآمد کروانے میں ناکام رہا ہے۔انتخابی اصلاحات کے بغیر عوام کا انتخابات پر اعتماد بحال نہیں ہوسکتا۔انہوں نے کہا کہ چند خاندانوں نے 73سال سے ملکی سیاست اور اقتدار پر قبضہ کررکھا ہے انہی خاندانوں کے شہزادے اور شہزادیا ں ہر حکومت اور اسمبلی میں شامل ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی عام آدمی کیلئے اقتدار کے ایوانوں کے دروازے کھولنا چاہتی ہے اس لیے عوام جماعت اسلامی کا ساتھ دے ۔

ذیشان اختر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -