عمران خان کے دورے کے 2 دن بعد ہی کابل پر 23 راکٹ داغ دیے گئے، کتنے لوگ مارے گئے؟

عمران خان کے دورے کے 2 دن بعد ہی کابل پر 23 راکٹ داغ دیے گئے، کتنے لوگ مارے گئے؟
عمران خان کے دورے کے 2 دن بعد ہی کابل پر 23 راکٹ داغ دیے گئے، کتنے لوگ مارے گئے؟
کیپشن:    سورس:   Twitter

  

کابل (ڈیلی پاکستان آن لائن) افغانستان کے دارالحکومت کابل میں شدت پسندوں کی جانب سے 23 راکٹ داغے گئے ہیں جس کے نتیجے میں 8 افراد ہلاک اور 31 زخمی ہوگئے۔

الجزیرہ ٹی وی کے مطابق ہفتہ کے روز کابل کے گرین زون میں راکٹ داغے گئے، یہ وہ علاقہ ہے جہاں بہت سے سفارتخانے اور عالمی اداروں کے دفاتر موجود ہیں۔ وزارت داخلہ کے ترجمان طارق آرین کے مطابق شدت پسندوں نے ایک چھوٹے ٹرک میں رکھ کر راکٹ داغے۔ اس بات کی تحقیقات جاری ہیں کہ یہ ٹرک شہر کے اندر کیسے داخل ہوا۔ ابتدائی اطلاعات کے مطابق اس حملے میں 8 افراد ہلاک اور 31 زخمی ہوئے ہیں۔

امارت اسلامی افغانستان (طالبان) نے حملے میں ملوث ہونے کے الزامات کو مسترد کردیا ہے اور واضح کیا ہے کہ وہ عوامی مقامات پر اندھا دھند حملے نہیں کرتے۔ 

خیال رہے کہ 2 روز پہلے ہی وزیر اعظم عمران خان نے کابل کا ایک روزہ دورہ کیا تھا۔ ان کے دورے کے موقع پر کابل میں سرکاری چھٹی اور سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

مزید :

بین الاقوامی -