35 سالہ خاتون ایک ہی جگہ 5 مرتبہ تیز رفتاری کرتی پکڑی گئی، معاملہ جج کے سامنے پہنچا، لیکن جب اسے پتہ چلا کہ خاتون کام کیا کرتی ہے تو فوراً باعزت بری کردیا

35 سالہ خاتون ایک ہی جگہ 5 مرتبہ تیز رفتاری کرتی پکڑی گئی، معاملہ جج کے سامنے ...
35 سالہ خاتون ایک ہی جگہ 5 مرتبہ تیز رفتاری کرتی پکڑی گئی، معاملہ جج کے سامنے پہنچا، لیکن جب اسے پتہ چلا کہ خاتون کام کیا کرتی ہے تو فوراً باعزت بری کردیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک خاتون ایک ہی جگہ پر تیزرفتاری میں گاڑی چلاتے ہوئے پکڑی گئی اور معاملہ عدالت تک جا پہنچا لیکن جب جج کو اس کی ملازمت کے بارے میں معلوم ہوا تو اسے فوراً باعزت بری کر دیا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ 35سالہ ہیلے مکڈونلڈ نامی خاتون پیشے کے اعتبار سے نرس تھی اور ان دنوں ایک ہسپتال کے انتہائی نگہداشت وارڈ میں وینٹی لیٹر پر موجود کورونا وائرس کے مریضوں کی نگہداشت پر اس کی ڈیوٹی لگی ہوئی تھی۔

رپورٹ کے مطابق ہیلے مسلسل 5ویں بار ایک ہی کیمرے میں اوورسپیڈنگ کرتی ہوئی پکڑی گئی تھی تاہم جب جج کو معلوم ہوا کہ وہ وینٹی لیٹر پر موجود کورونا وائرس کے مریضوں کی نگہداشت پر مامور ہے تو اس نے خاتون کو فوری طور پر باعزت بری کر دیا۔ جج نے ریمارکس میں کہا کہ اگر ہیلے پر گاڑی چلانے کی پابندی عائد کی جائے تو یہ اس پر اضافی بوجھ ہو گا۔ وہ پہلے ہی ہسپتال میں انتہائی اہم ذمہ داری نبھا رہی ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -