افغانستان میں کابل راکٹ حملوں جیسے واقعات کیوں ہو رہے ہیں؟علامہ طاہر اشرفی نےبڑی سازش کا پردہ چاک کر دیا 

افغانستان میں کابل راکٹ حملوں جیسے واقعات کیوں ہو رہے ہیں؟علامہ طاہر اشرفی ...
افغانستان میں کابل راکٹ حملوں جیسے واقعات کیوں ہو رہے ہیں؟علامہ طاہر اشرفی نےبڑی سازش کا پردہ چاک کر دیا 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم عمران خان کے نمائندہ خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی و مشرق وسطیٰ اور چیئرمین پاکستان علماء  کونسل علامہ طاہر محمود اشرفی نے کابل میں ہونے والے راکٹ حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغانستان میں امن کے لئے کی جانے والی کوششوں کو روکنے کے لئے اس طرح کے حملے کئے جا رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق علامہ طاہر محمود اشرفی نے کابل میں ہونے والے راکٹ حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان افغانستان کے امن کو اپنا امن سمجھتا ہے،افغانستان اور پاکستان کے امن کے خلاف سازشیں کرنے والوں کا ہمیں مل کر مقابلہ کرنا ہو گا ،افغانستان میں امن کے لئے کی جانے والی کوششوں کو روکنے کے لئے اس طرح کے حملے کئے جا رہے ہیں لیکن انشاءاللہ افغانستان میں امن عمل مکمل ہو گا اور دونوں برادر ملکوں میں امن قائم ہو گا ۔

ایک سوال کے جواب میں علامہ طاہرمحمود  اشرفی نے کہا کہ  اگرکوئی شخص بھی جرم یا گناہ کرتاہے تو اس کو سزادینا حکومتوں اور عدالتوں کی ذمہ داری ہوتی ہے،علماء کا اس بات پر اجماع ہے کہ ایک شخص کا قتل انسانیت کے قتل کے برابر ہے،ملک میں کسی فرد،گروپ یا تنظیم کو ماورائے عدالت قتل اور فساد پھیلانے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ہے،وزیراعظم عمران خان کی ہدایات کے مطابق پشاور اور ننکانہ صاحب میں ہوئے قتل کے واقعات کی تحقیقات ہونگی ۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -