عوام پی ٹی آئی کو انقلابی سمجھ رہے تھے وہ مکمل خرابی نکلی ، سراج الحق کا طنز

عوام پی ٹی آئی کو انقلابی سمجھ رہے تھے وہ مکمل خرابی نکلی ، سراج الحق کا طنز
عوام پی ٹی آئی کو انقلابی سمجھ رہے تھے وہ مکمل خرابی نکلی ، سراج الحق کا طنز

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ عوام پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی) کو انقلابی سمجھ رہے تھے وہ مکمل خرابی نکلی،کورونا ، ڈینگی ، سموگ خطر ناک لیکن حکومت کی نا اہلی عوام کے لیے ان سے 100گنا زیادہ خطرناک ہے,حکومت کے جھوٹ ،فریب اور وعدوں کے تعمیر کردہ مینار پاش پاش ہونے والے ہیں, وزیراعظم کھلاڑی رہے ہیں مگر وہ مخالف ٹیم سے قوائدو ضوابط طے کئے بغیر یکطرفہ کھیل کھیلنا چاہتے ہیں،17 نومبر ملک کی تاریخ کا سیاہ دن تھا، چھ گھنٹوں کے اجلاس میں تین گھنٹے ممبران اسمبلی ایک دوسرے کو ذدوکوب کرتے رہے اور اگلے تین گھنٹوں میں 37قانون پاس ہوگئے، قوم کے نمائندوں نے قوم کے مستقبل سے متعلق ہر قانون کو چھ منٹ دیے،قوم نےحکومتی ہتھکنڈوں کو مسترد کردیا،عوام ڈیجیٹل دھاندلی کےامکانات سےبھرپور آئندہ الیکشن کو قبول نہیں کریں گے، 22 کروڑ عوام کے لیے زندگی گزارنا مشکل بنا دیا گیا ہے،اس ملک کی معیشت تباہ ہے،سٹیٹ بنک کوعالمی مالیاتی ادارے(آئی ایم ایف) کے حوالے کردیا گیا، پی ٹی آئی نااہلوں کا ٹولہ ہے،حکومت کے پاس ویژن ہے نہ صلاحیت،سابقہ حکومتیں بھی ملک کی معیشت اور اداروں کی تباہی کی برابر ذمہ دار ہیں،جماعت اسلامی ملک میں حقیقی تبدیلی کی علمبردار ہے،ہم دو نہیں ایک پاکستان بنانا چاہتے ہیں، جماعت اسلامی ملک میں اسلامی انقلاب برپا کرے گی،کارکنان محنت جاری رکھیں انشاء اللہ کامیاب ہوں گے۔

منصورہ میں مرکزی تربیت گاہ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئےسراج الحق نے کہا کہ حکومت نے پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس ملتوی کرتے ہوئے اعلان کیا تھا کہ اپوزیشن سے صلاح مشورہ کیا جائے گا مگر پتہ چلا کہ اندر کھاتے اتحادیوں کو راضی کیا جارہا ہے، وہ اتحادی جنہوں نے الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں کو مسترد کرنے کا کہا تھا راتوں رات راضی ہوگئے اور بل پر ٹھپے لگا دیئے،حقیقت یہ ہے کہ پی ٹی آئی نے شکست کے خوف سے آئندہ الیکشن میں دھاندلی کامنصوبہ بنا لیا ،وہ وزیراعظم جو گیئر پلے کی باتیں کرتے ہیں اور دعوے کرتے ہیں کہ وہ کھلاڑی ہیں ایک ایسا کھیل کھیلنے جارہے ہیں جس میں مخالف فریق کو کھیل کے طریقہ کار کا ہی پتہ نہیں، حکومت نے ملک کے مستقبل کو تباہ کر دیا ہے، الیکٹرانک ووٹنگ مشین(ای وی ایم) کے بارے میں جس طرح عمران خان نے کارروائی کی، اب اس سے انہوں نے آنے والے الیکشن کو بھی متنازع بنایا ہے، جمہوریت کے نام پر ہماری حکومت نے جو کچھ کیا اس سے جمہوریت پر بدنماداغ لگ گیا ہے۔

امیر جماعت نے کہا سرمایہ داروں اور جاگیرداروں کے ٹولے نے غریب عوام کے ارمانوں کا خون کردیا، یہ وہی لوگ ہیں جن کے نام کبھی پانامہ لیکس میں آتے ہیں کبھی پینڈورا پیپرز کی زینت بنتے ہیں،جماعت اسلامی کامسئلہ نہ کسی پانامہ پینڈورا کا ہے نہ ہی ہمارے پیچھے نیب لگی ہے، ہمارا ماضی اور حال قوم کے سامنے ہے،ہم عوام کی بات کرتے ہیں،ہم اسلامی پاکستان کی بات کرتے ہیں، قوم آزمائے ہوئے حکمرانوں کو مسترد کرے اور جماعت اسلامی کا ساتھ دے۔

بعدازاں امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے وفد کے ہمراہ پاکستان مسلم لیگ ق کے صدر چوہدری شجاعت حسین کی نجی ہسپتال میں عیادت کی۔ جماعت اسلامی پاکستان کے نائب ڈاکٹر فرید احمد پراچہ، ڈپٹی سیکرٹری جنرل محمد اصغر، امیر جماعت اسلامی وسطی پنجاب مولانا جاوید قصوری اور جماعت اسلامی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات قیصر شریف بھی ان کے ہمراہ تھے۔سراج الحق نے چوہدری شافع حسین سے ان کے والد چوہدری شجاعت کی خیریت دریافت کی اور ان کی صحت یابی کے لیے دعا کی۔امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا کہ چوہدری شجاعت حسین جیسی شخصیت نے شرافت کی سیاست کو فروغ دیا ہے، جس کے باعث ان کا ہر پاکستانی بے حد احترام کرتا ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -