سپریم کورٹ نے اصغرخان کیس میں تاریخی فیصلہ دیاحکمران اس پر عملدرآمد نہیں کروائیں گے:سیاسی مذہبی رہنمائ

سپریم کورٹ نے اصغرخان کیس میں تاریخی فیصلہ دیاحکمران اس پر عملدرآمد نہیں ...

  

لاہور (رپورٹنگ ٹیم) سپریم کورٹ نے اصغر علی خان کیس میں تاریخی فیصلہ دیا ہے مگر گردن تک کرپشن میں دھنسے ہوئے حکمران اس پر عملدرآمد نہیں کروائیں گے۔ اسٹیبلشمنٹ سے پیسے وصول کرنے والوں کے ساتھ ساتھ رینٹل پاور منصوبوں میں اربوں روپے کی کرپشن پر پابندی لگائی جائے۔ اس امر کا اظہار مختلف سیاسی و دینی رہنماﺅں کے علاوہ سول سوسائٹی، تاجر برادری کے رہنماﺅں نے پاکستان کے سلسلے ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کرتے ہوئے کیا۔ جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سید منور حسن نے کہا کہ بہتر ہوتا کہ وزیراعظم اسٹیبلشمنٹ سے پیسے وصول کرنے والوں کے ساتھ ساتھ رینٹل پاور منصوبوں میں اربوں روپے سے ہاتھ رنگنے اور قومی دولت لوٹ کر سوئس بنکوں میں جمع کرانے والوں سے بھی ایک ایک پائی وصول کی جائے۔ موجودہ حکومت کا پانچ سالہ دور کرپشن کی کمائی کو تحفظ دینے کے لیے عدلیہ سے محاذ آرائی میں گزرا ہے۔ خود وزیراعظم پر کرپشن کے کئی الزامات ہیں۔ کرپشن سے ہاتھ رنگنے والے اب مصنوعی احتساب کے ذریعے ایک دوسرے کی لوٹ مار پر پردہ ڈالنے کے لیے متفق ہو چکے ہیں۔ صدر سمیت کوئی حکومتی عہدے دار عدلیہ کے احکامات پر کان دھرنے کو تیار نہیں بلکہ الٹا ان احکامات کا مذاق اڑایا جاتاہے۔ اعلیٰ عدلیہ پانچ سال سے صدر کے دو عہدوں کو غیر آئینی اور غیر قانونی قرار دے رہی ہے اور صدر سے مطالبہ کررہی ہے کہ وہ پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین کا عہدہ چھوڑ دیں لیکن زرداری نے ایوان صدر کوپیپلز پارٹی کے ہیڈآفس میں بد ل کر صدر مملکت کے غیر جانبدارانہ تشخص کی دھجیاں بکھیر دی ہیں۔ جمعیت اہلحدیث پاکستان کے سربراہ پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ نے خوش آئندہ فیصلہ دیا ہے لیکن ا س فیصلے کے بعد حکومت پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے اس کی مکمل تحقیقات کریں انہوں نے کہا کہ ملک میں ایجنسیوں کی سیاست میں مداخلت بند کرنے کے لئے حکومت سنجیدگی کا مظاہر کرے اور رقوم کی تقسیم کرنے والے جرنیلوں کا سخت احتساب کیا جائے۔ ایجنسیوں کے ذریعے سیاسی جوڑ توڑ بند ہونے چاہییں۔ انجمن تحفظ شہریان کے رہنماءحاجی غلام حسین ،ملک محمد عارف، حاجی لیاقت ملک اور محمد اشفاق نے کہا کہ اصغر خان کیس کے بعد پیسے لینے والوں کے چہرے بے نقاب کئے جائیں۔قومی خزانہ لوٹ کر سیاستدانوں کو رقوم تقسیم کی گئی ہیں جن سیاستدانوں نے رقوم لیں، ان سے یہ رقوم واپس لی جائیں اور ان پر سیاست میں حصہ لینے پر پابندی عائد کی جائے۔ملک کی تقدیر بدلنے کا وقت آگیا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -