اصغر خان کیس کا فیصلہ سر آنکھوں پر، ہمیں فرق نہیں پڑتا، شہباز شریف

اصغر خان کیس کا فیصلہ سر آنکھوں پر، ہمیں فرق نہیں پڑتا، شہباز شریف

  

لاہور (+جنرل رپورٹر،ثناءنیوز) وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے کہا ہے کہ اصغر خان کیس میں سپریم کورٹ آف پاکستان کا فیصلہ سرآنکھوں پر اسے من و عن تسلیم کرتے ہیں ہم پر جس رقم کے لینے کا الزام ہے اس کے ثبوت لائے جائیں عدالتی فیصلے سے ہمیں کوئی فرق نہیں پڑتا رقوم کی تقسیم کی شفاف تحقیقات کرائی جائیں۔قوم جانتی ہے اصل مجرم کون ہے صدر زرداری نے 2009 ءمیں آئی بی کو 50 کروڑ دئیے ان کا بھی حساب ہونا چاہیے 12 اکتوبر 1999 ءکو نواز شریف کی حکومت کیسے ختم کی گئی اور نواز شریف کی پہلی حکومت کو گرانے کے لیے جو لانگ مارچ کیا گیا اس کے لیے پیسے کہاں سے ائے کوئی سمجھتا ہے کہ کشمیر کو طاقت کے ذریعہ حاصل کر سکتا ہے تو اسے یہ خوش فہمی ختم کردینی چاہیے جنگ سے دونوں ملکوں میں غربت ، بے روزگاری اور تباہی کے سوا کچھ نہیں ملے گا۔ ان خیالات کا اظہار شہباز شریف نے کلر کہار میں کیڈٹ کالج کی افتتاحی تقریب سے خطاب اور بعد مین میڈیا سے گفتگو میں کیا۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ نوجوانوںکی محنت کی وجہ سے ملک ترقی کر سکے گا ان کا کہنا تھا کہ اس وقت ملک کو توانائی کے بحران کا سامنا ہے اور یہ بحران ہمار اپنا کھڑا کیا ہوا چیلنج ہے۔ یہ سب خراب طرز حکمرانی کی وجہ سے ہے ان کا کہنا تھا ہائیڈل کے شعبہ سے بھاری مقدار میں بجلی حاصل ہو سکتی ہے جبکہ ہم سالانہ 10 ارب ڈالر کا کروڈ آئل برآمد کرتے ہیں اس کی بھی بچت ہو سکتی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی اور کرپشن بھی مسائل میں شامل ہیں ان مشکلات کا ملک کو آج سامنا ہے یہ سب ہماری اپنی وجہ سے ہیں کسی کو ان کا ذمہ دار قرار نہیں دیا جا سکتا۔ اچھی حکمرانی سے یہ مسائل حل ہو سکتے ہیں۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ اگر کوئی سمجھتا ہے کشمیر فوجی قوت سے حاصل کیا جا سکتا ہے تو اس پر میں صرف یہ کہہ سکتا ہوں کہ اس سے پاکستان اور بھارت میں صرف تباہی ، غربت اور بیروزگاری ہی آئے گی اگر ہم نے کشمیر حاصل کرنا ہے تو اس لیے ہمیں پاکستان کو رول ماڈل بنانا ہو گا اوریہ صرف ہماری انتھک کوششوں سے ہی ممکن ہو سکت اہے ایلیٹ کلاس ،جنرلز ، ججز ، سیاستدانوں ، سرمایہ داروں اور تاجروںکو سمجھنا ہوگا۔ ہمیں ایک قوم بننا ہے۔ دریں اثناءوزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے آشیانہ ہاﺅسنگ سکیم میں مختلف کاموں کی رفتار پرعدم اطمینان اور برہمی کااظہار کرتے ہوئے متعلقہ حکام کی سرزنش کی ہے۔ وزیراعلیٰ آج اچانک سروبہ اٹاری آشیانہ سکیم پہنچ گئے اور زیر تعمیر کاموں کا معائنہ کیا۔ انہوں نے پارک کی تعمیر میں تاخیر، سکول میں کلاسز کے اجراءاور بس سروس میں بے قاعدگی کے حوالے سے عوایم شکایات کا سخت نوٹس لیتے ہوئے کہا کہ غریب کو چھت کے نیچے تمام ضروری سہولیات میسر آنی چاہئیں۔ آشیانہ پراجیکٹ کے معاملات فوری درست کئے جائیں۔ انہوں نے وارننگ دی کہ جو افسر یا اہلکار کام نہیں کرے گا،اسے گھر بھیج دوں گا۔ آشیانہ ہاﺅسنگ سکیم عام اور غریب آدمی کا منصوبہ ہے اس کے کاموں میں تاخیر یا کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کروں گا۔ انہوں نے پنجاب لینڈ ڈویلپمنٹ کمپنی کے حکام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آشیانہ سکیم شروع کرنے کا مقصد ہی کم آمدنی والے افراد کو زندگی کی تمام بنیادی سہولیات ایک چھت تلے فراہم کرنا ہے اور اگر معاملات درست نہ کئے گئے تو سب کو فارغ کردوں گا۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ مجھے آشیانہ آکر انتہائی افسوس ہوا ہے کیونکہ یہاں معاملات صحیح ڈگر پر نہیںچل رہے اور رہائشیوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہاہے جو میں کسی صورت برداشت نہیں کرسکتا۔ وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ آشیانہ سکیم میں زیر تعمیر پارک پر کام کی رفتار تیز کی جائے اور اسے عیدالاضحی سے قبل مکمل کیا جائے۔ سکیم کے سکول میں بھی کلاسوں کا اجراءسات روز کے اندر ہونا چاہئے۔ رہائشیوں کی شکایات پر انہوں نے حکم دیا کہ آشیانہ کے روٹ پر فوری طورپر بس چلائی جائے تاکہ انہیں تعلیمی اداروں اور دفاتر جانے کے لئے آسانی ہو۔ علاوہ ازیں گزشتہ روز وزیراعلیٰ سے ماڈل ٹاﺅن میں مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنماو سابق وزیراعلی خیبر پختونخواہ سردار مہتاب خان عباسی نے ملاقات کی۔ ملاقات میں مسلم لیگ (ن) کے تنظیمی امور اور سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیراعلی محمد شہباز شریف نے کہاکہ مسلم لیگ (ن) ملک کی مقبول ترین سیاسی جماعت بن چکی ہے۔ آئندہ عام انتخابات میں مسلم لیگ( ن) کے امیدوار بھاری اکثریت سے کامیاب ہو ں گے۔ انہوںنے کہاکہ پنجاب حکومت نے ساڑھے چار برس کے دوران صوبے کے عوام کی خدمت کی ہے۔ پنجاب حکومت نے نوجوانوں کی فلاح و بہبود کے لئے متعدد انقلابی اقدامات کئے ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -