70ہزارافراد نے ایک ساتھ قومی ترانہ گاکر عالمی ریکارڈ قائم کردیا

70ہزارافراد نے ایک ساتھ قومی ترانہ گاکر عالمی ریکارڈ قائم کردیا

  

لاہور(جنرل رپورٹر،سپورٹس رپورٹر‘ ایجنسیاں) پنجاب کے حب الوطنی سے معمور70,000 افراد نے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف کے ہمراہ قومی ترانہ پڑھ کر نئی تاریخ رقم کرتے ہوئے گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ قائم کرتے ہوئے بھارت کے سابقہ ریکارڈ کو توڑ دیا۔گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ کی دورکنی ٹیم نے بھی اس ورلڈ ریکارڈ کے بننے کی تصدیق کردی ہے۔ اس تصدیق کے بعد 2013ءکی گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں پاکستان کا نام درج کر دیا جائے گا۔ عالمی ریکارڈ قائم ہونے کے اعلان کے ساتھ ہی نیشنل ہاکی سٹیڈیم پاکستان زندہ باد کے زوردار نعروں سے گونج اٹھا۔ اس عالمی ریکارڈ کی مانیٹرنگ کےلئے گیرتھ ڈیوز اور عمران جاوید پر مشتمل گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ کی دو رکنی ٹیم سٹیڈیم میں موجود تھی ۔ گنیز بک کی ٹیم کو ان کی سٹیڈیم آمد پر زور دار تالیوں کی گونج میں خوش آمدید کہا گیا۔ وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کہا کہ یہ پنجاب نہیں پورے پاکستان کا فیسٹیول ہے ،ایسا منظر شہر لاہور نے آج سے قبل نہیں دیکھاآج ثابت ہو گیا کہ اس قوم میں بڑی جان ہے ،لوڈ شیڈنگ اور بد ترین کرپشن کے باوجود عوام نے اکٹھے ہوکر ثابت کر دیا ہے کہ علی بابا چالیس چوروں کو بھگا دیں گے اور ملک کو عظیم تر بنائیں گے۔ لاہورمیں طلبہ ،ایتھلیٹس اور رضاکاروں نے پاک سرزمین شاد پڑھا تو اس کی گونج پوری دنیا میں سنی گئی۔ پاک سرزمین شاد باد کے الفاظ سے سایہ خدائے ذوالجلال کہنے تک لاہوری وہ کام کر چکے تھے جو دنیا میں کسی اور نے نہیں کیا۔ سب سے زیادہ افراد کا ایک ساتھ قومی ترانہ پڑھنے کا عالمی ریکارڈ قائم کرنے کیلئے طلبہ ، ایتھلیٹس اور رضاکار کئی دن سے پرجوش تھے۔نیشنل ہاکی اسٹیڈیم میں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کی آمد کےساتھ ہی یہ جوش و خروش اپنے عروج پر پہنچ گیا۔ سٹیڈیم کھچا کھچ بھرا ہوا تھا۔ گنیزبک آف ورلڈ ریکارڈ کی ٹیم بھی اسٹیڈیم میں موجود تھی۔عالمی ریکارڈ بنانے کے لیے لاہور کے نیشنل ہاکی اسٹیڈیم میں ہزاروں طلبا و طالبات نے ایک ساتھ قومی ترانہ پڑھا۔ اتنے بڑے پیمانے پر قومی ترانہ پڑھنے کا ریکارڈ قائم کرنے کی پریکٹس کے دوران ملی نغمے بھی گائے گئے۔ واضح رہے کہ قومی ترانہ پڑھ کر عالمی ریکارڈ قائم کرنے کی تقریب 160 ممالک میں براہ راست دیکھی گئی۔ یوتھ فیسٹیول کے چیف آرگنائزر اور ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی رانا مشہود احمد اور ڈی جی سپورٹس اینڈ یوتھ آفیسر عثمان انور نے اس موقع پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ سب کچھ ٹیم ورک کا نتیجہ ہے۔ ہم نے دنیا کو بتا دیا ہے کہ پاکستانی قوم کسی بھی مرحلہ میں کسی سے کم نہیں ہے۔ ہم ایک منظم قوم ہیں۔ صوبہ کی 9 ڈویژن سے تعلق رکھنے والے 70 ہزار نوجوانوں کے وزیراعلیٰ پنجاب کے خواب کو حقیقت کا رنگ دینے کیلئے بھرپور جوش وجذبہ سے اظہار کیا۔ خاص کر تعلیمی اداروں کے طلبہ کا جذبہ قابل دید ہے جنہوں نے انتہائی نظم وضبط کا مظاہرہ کیا اور پاکستان کا نام عالمی سطح پر بلند کر دیا۔ قبل ازیں پنجاب یوتھ فیسٹیول کے اختتامی مرحلے کا آغاز رنگا رنگ تقریب سے ہوا ۔ تماشائیوں نے بھرے سٹیڈیم نے وزیراعلیٰ پنجاب کا زور دار تالیاں بجا کر استقبال کیا۔ اولمپئن ریحان بٹ نے یوتھ فیسٹیول کے اختتامی مرحلے کی مشعل روشن کی۔

مزید :

صفحہ اول -