ن لیگ اب بھی عدالتی فیصلوں پر عملدرآمد کے لیے ”ویویلا“کرے: اعتزاز احسن

ن لیگ اب بھی عدالتی فیصلوں پر عملدرآمد کے لیے ”ویویلا“کرے: اعتزاز احسن
ن لیگ اب بھی عدالتی فیصلوں پر عملدرآمد کے لیے ”ویویلا“کرے: اعتزاز احسن

  

گجرات(مانیٹرنگ ڈیسک)ممتاز قانون دان اور پیپلز پارٹی کے رہنما سینیٹر اعتزاز احسن نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے فیصلے میں پیسے دینے والوں کے خلاف سختی برتی گئی تاہم پیسے لینے والوں کے ساتھ نرمی کی گئی جس پر عوام میں تحفظات ہیں۔پریس کانفرنس کرتے ہوئے اعتزاز احسن کا کہنا تھا کہ فیصلہ میں جنرل اسد درانی کے حلف نامہ میں شریف برادران کا ذکر موجود ہے جس کی بنیاد پر فیصلہ ہوا۔ نواز شریف اور شہباز شریف کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے۔سپریم کورٹ کے فیصلے نے پیپلزپارٹی کے 20، 22 سال پرانے موقف کی تصدیق کردی ہے۔اعتزاز احسن کا کہنا تھا کہ 1988ءاور 1997 ءکے انتخابات کی بھی تحقیقات ہونی چاہیے کہ اس میں کون سے خفیہ ہاتھ استعمال ہوئے، سب سے زیادہ مسلم لیگ ن اس بات پر واویلا کرتی رہی کہ پیپلز پارٹی سپریم کورٹ کے فیصلوں پر عملدرآمد نہیں کررہی۔ اب کوئی رحمن ملک کی ایف آئی اے کہہ کر اعتراض لگاتا ہے تو وہ توہین عدالت کے ذمرے میں آتا ہے، یہ وہی ایف آئی اے ہے جس نے حج سکینڈل کے علاوہ مونس الہٰی کے خلاف تحقیقات کیں۔

مزید :

گجرات -