اقوام متحدہ پاکستان پر ہونیوالے غیر قانونی ڈرون حملوں کا نوٹس لے،ساجد میر

اقوام متحدہ پاکستان پر ہونیوالے غیر قانونی ڈرون حملوں کا نوٹس لے،ساجد میر

لاہور ( سٹاف رپورٹر) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ حکومت کو ادراک ہوچکا ہے کہ جب تک ڈرون حملے بند نہیں ہو ںگے امن قائم ہو سکتا ہے اور نہ طالبان سے مذاکرات کامیاب ہو سکتے ہیں وزیر اعظم نوازشریف کی طرف سے اوباما سے ملاقات میں ڈرون کا معاملہ اٹھانے کے عزم کا اظہار اسی ادراک کی عکاسی کرتا ہے علماءکے مختلف وفود سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ ڈرون حملے عالمی قوانین کی خلاف ورزی اور پاکستان کی سلامتی اور خودمختاری کےلئے خطرہ اور دہشت گردی میں اضافہ کا باعث ہیں اقوام متحدہ پاکستان پر ہونیوالے غیر قانونی ڈرون حملوں کا نوٹس لے اور ان کو روکنے کیلئے ضروری اقدامات اٹھائے انہوں نے کہا کہ پاکستان کے بغیر امریکہ کے افغان طالبان کے ساتھ مذاکرات کامیاب ہو سکتے ہیں نہ پرامن انخلاممکن ہے وزیراعظم نوازشریف طالبان کے ساتھ مذاکرات کیلئے کسی بھی حد تک جانے کو تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میاں نوازشریف سے قوم توقع کر رہی ہے کہ وہ اوباما کے سامنے ڈرون حملوں کے حوالے سے اپنا کیس جرات کے ساتھ اٹھائیں گے نوازشریف قومی امنگوں کے مطابق نہ صرف اوباما کے ساتھ ملاقات میں ڈرون حملوں پر پاکستان کا موقف واضح کریں بلکہ قوم کی بیٹی ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی کا بھی مطالبہ کریں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1